نعیم الحق رنگے ہاتھوں پکڑے گئے ،خاتون صحافی نے شرم سے پانی پانی کردیا

نعیم الحق رنگے ہاتھوں پکڑے گئے ،خاتون صحافی نے شرم سے پانی پانی کردیا
نعیم الحق رنگے ہاتھوں پکڑے گئے ،خاتون صحافی نے شرم سے پانی پانی کردیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی نعیم الحق نے دورہ سعودی عرب سے قبل وزیراعظم کی برطانوی صحافیوں سے گفتگوکی تردید کردی جس پر غیر ملکی صحافی میدان میں آگئیں اور نعیم الحق کا بیان جھوٹا قرار دے دیا ۔

تفصیل کے مطابق نعیم الحق نے کہا کہ کسی انٹرویو کی درخواست نہیں کی گئی اور نہ ہی اس کی اجازت دی گئی ،وزیراعظم عمران خان کے دوست اور کرکٹ رائٹر جان اوسبورن اپنی کتاب پیش کرنے کے سلسلے میں آئے تھے اور ان کے ساتھ تین لوگ اور بھی تھے جنہیں ہم نہیں جانتے ۔

اس پر امینڈہ چوکلے نامی خاتو ن صحافی نے کہا کہ میں نعیم الحق سے اختلاف کرتی ہوں کیونکہ تین برطانوی صحافی اور ایک آئرش صحافی (جو کہ میں خود ہوں)برطانوی صحافی گروپ کے طور پر پاکستان گئے ،وزیراعظم عمران خان کو انٹر ویو کی پیشکش کی ۔

20اکتوبر کو وزیراعظم سے ملاقات ہوئی اور ہم نے آن ریکارڈ ایک گھنٹے بارہ منٹ کا انٹر ویو کیا۔نعیم الحق اور فواد چوہدری بھی اس موقع پر موجود تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ ملاقات میں موجود تمام صحافیوں نے اپنی ڈیوائسز پر انٹر ویو ریکارڈ کیا اور کمرے میں موجود سب لوگوں نے یہ چیز دیکھی ۔یہ ریکارڈنگ کی ڈیوائسز وزیراعظم عمران خان کے ساتھ رکھی ہوئی میز پر موجود تھیں اور وہاں آف دی ریکارڈ گفتگو کے بارے میں کوئی بات نہیں ہوئی تھی ۔

واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے سعودی عرب روانگی سے قبل برطانوی صحافیوں کو انٹر ویو دیا تھا جس کی خبر مقامی میڈ یا نے بھی چلائی تھی ۔

مزید :

قومی -ڈیلی بائیٹس -