فرسٹ مائیکرو فنانس بینک لمیٹڈ پاکستان،سعیدہ مانڈوی والاکے درمیان بیوٹی سلونز سیکٹر کو جدید خطوط پر استوار کرنے کا معاہدہ

فرسٹ مائیکرو فنانس بینک لمیٹڈ پاکستان،سعیدہ مانڈوی والاکے درمیان بیوٹی ...
فرسٹ مائیکرو فنانس بینک لمیٹڈ پاکستان،سعیدہ مانڈوی والاکے درمیان بیوٹی سلونز سیکٹر کو جدید خطوط پر استوار کرنے کا معاہدہ

  



کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن )فرسٹ مائیکرو فنانس بینک لمیٹڈ پاکستان اور سعیدہ مانڈوی والا ،ٹونی اینڈ گائے کے مابین کراچی کے بیوٹی پارلرز اور سلون کو جدید خطوط پر استوار کرنے کا معاہدہ گزشتہ روز طے پاگیا۔ تفصیلات کے مطابق معاہدے کے تحت سعیدہ مانڈوی والا بیوٹی پارلرز اور سلون کی مالکان کی کاروباری صلاحیتوں میں اضافہ کرنے کی تربیت فراہم کرنے کے کیساتھ ان میں لیڈر شپ پیداکرنے کی تربیت بھی فراہم کریں گی۔اس معاہدے کا مقصد ان خواتین کی بہبود میں بہتری اور ترقی کے یکساں مواقعوں سے فائدہ اٹھانے کی صلاحیتیں پیدا کرنا ہے تاکہ وہ اپنے کاروبار کو وسعت دے سکیں۔اس معاہدے کا اعلان ایک سیمینار میں کیا گیا جو مورخہ 23اکتوبر کوکراچی میں واقع بیچ لگڑری ہوٹل میں ہوا۔

فرسٹ مائیکرو فنانس بینک ہمیشہ اپنے صارفین کی انٹرپرینیورل بنیاد کو مضبوط تر کرنے کے عزم پر کاربند رہا ہے اوراس کے لئے ان کے مالیاتی ، فزیکل اور انسانی وسائل کو ترقی دینے کا خواہاں ہے۔جیسا کہ بینک کا مشن ہے کہ اپنے قابل قدر صارفین بالخصوص خواتین کے لئے راہیں ہموار کرے ، اس لئے یہ نئی کاوش بھی انہی اقدامات کا تسلسل ہے۔ ایونٹ میں سلون میں اختیار کی جانے والی بہترین پریکٹسز کو محترمہ مانڈوی والا نے شرکاءکے سامنے پیش کیا۔ انہوں نے اپنے کاروبارمیں اختیار کی جانے والی عملی ترجیحات کا مظاہرہ کیا تاکہ شرکاکو بین الاقوامی طور پر اختیار کی جانے والی بیوٹی سلون کی پریکٹسز سے آگاہی ہو۔سیمینار میں فرسٹ مائیکرو فنانس بینک کی جانب سے شرکا کو خصوصی طور پر بنائے گئے فنانشل سلوشنز سے بھی متعارف کروایا گیا تاکہ وہ تکنیکی صلاحیتوں اور کاروباری اثاثوں کو اپ گریڈ کریں۔

اس موقع پر فرسٹ مائیکرو فنانس بینک کے بورڈ آف ڈائریکٹر کی رکن مایا عنایت اسماعیل نے کہا "اپنے آغاز سے فرسٹ مائیکرو فنانس بینک نے جدید ، تخلیقی اور کثیر ال جہت مصنوعات اور سروسز فراہم کی ہیں تاکہ متوسط آمدن سے تعلق رکھنے والے گھرانوں کو بھی بینکاری سے منسلک کرکے ان کی ترقی ممکن بنائی جاسکے۔ہم خصوصی طور پر خواتین کو بااختیار بنانے کے اپنے عزم پر کاربند ہیں تاکہ وہ کمیونٹی کی بہبود میں فعال کردار ادا کرسکیں۔اہم بات یہ ہے کہ ہر عمر اور طبقے سے تعلق رکھنے والی خواتین کو بااختیار بنایا جائے اور ایک ایسا سازگار ماحول فراہم کیا جائے جہاں ان کی صلاحیتیں پھل پھول سکیں۔ہمیں بہت خوشی ہے کہ آج ایسے سیمینار میں خواتین کی سماجی ترقی کے حوالے سے اچھی کوششیں جاری ہیں اور ہمارا بینک ہمیشہ ہی ایسے منصوبوں اور پروگراموں کو سپورٹ کرتا رہے گا تاکہ ملک میں خواتین انٹرپرینور ز سامنے آئیں۔

محترمہ سعیدہ مانڈوی والا نے اپنے خیالات کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ مجھے ہمیشہ ہی گھروں میں چلتے کاروبار کو سپورٹ کرنا اور ان کیساتھ تعاون کرنا اچھا لگتا ہے کیونکہ ایسا کرنے سے ہمارے معاشرے کی متوسط طبقے سے تعلق رکھنے والی خواتین پر روزگار اور آمدن بڑھانے کے راستے ہموار ہوتے ہیں۔ فرسٹ مائیکرو فنانس بینک کیساتھ اس تعاون کی بدولت ہم اپنی معیشت میں خواتین کے کردار کو مزید وسعت دینا چاہتے چاہتے ہیں تاکہ ملک کی مجموعی معاشی نمو بہتر ہو اور اِن خواتین کی بہبود میں اضافہ ہو۔اس منصوبے کی سرگرمیوں کو اس طرح وضع کیا گیا ہے کہ کاروباری خواتین کو حائل مشکلات کا جلد اور احسن حل فراہم کیا جائےاور ان کی انٹرپرینور صلاحیتوں کو جل بخشی جاسکے۔اسپروگرام کے ذریعے وہ خواتین بھی جو گھر پر رہ کر کام کرنا چاہتی ہیں انہیں بھی ترقی کے یکساں مواقع میسر آئیں گے۔ہماری کاوش ایک ایسا کاروباری ڈھانچہ تیار کرنا ہے جس میں خواتین کے کاروبار کو ترقی ملے اور ملک کی جی ڈی پی بہتر ہو اور خواتین ہماری ورک فورس کا حصہ بنیں۔

اس ایونٹ میں فرسٹ مائیکرو فنانس بینک اور ٹونی اینڈ گائے کی ٹیم کے علاوہ کراچی کے کئی سلون سے تعلق رکھنے والی خواتین کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

فرسٹ مائیکرو فنانس بینک کے بار ے میں:

فرسٹ مائیکرو فنانس بینک لمیٹڈ 2002 میں ملک بھر میں مائیکرو فنانس سہولیات فراہم کرنے کے لئے قائم کیا گیا جسے اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے لائسنس دیا۔فرسٹ مائیکرو فنانس بینک آغا خان رورل سپورٹ پروگرام کے سیونگ سیکشن سے چلایا جاتا ہے۔ فرسٹ مائیکرو فنانس بینک کا مقصد ملک میں غربت میں کمی لانا اور سماجی و معاشی ترقی کی راہ ہموار کرنا ہے اور ایسے طبقے کو بینکاری کی جدید سہولیات فراہم کرنا ہیں جو بینکوں سے قرضہ حاصل نہیں کرسکتے۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی