یوٹرن عمران خان کا ٹریڈمارک،آزادی مارچ کی اجازت خوش آئند ،حکومت نے عوامی سیلاب کے سامنے گھٹنے ٹیک دیئے:پیر اعجاز ہاشمی

یوٹرن عمران خان کا ٹریڈمارک،آزادی مارچ کی اجازت خوش آئند ،حکومت نے عوامی ...
یوٹرن عمران خان کا ٹریڈمارک،آزادی مارچ کی اجازت خوش آئند ،حکومت نے عوامی سیلاب کے سامنے گھٹنے ٹیک دیئے:پیر اعجاز ہاشمی

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)جمعیت علمائے پاکستان کے مرکزی صدر اور متحدہ مجلس عمل کے نائب صدر پیر اعجاز احمد ہاشمی نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کا آزادی مارچ کی اجازت دینے کا فیصلہ خوش آئند ہے،حکومت نے مجبور ہوکر ایک اور یوٹرن لیا ہے،یہ حکمرانوں کے اپنے فائدے میں ہوگا۔

 پیر اعجاز ہاشمی نے کہا کہ اناڑیوں کی موجودہ حکومت جمہوری روایات اور سیاسی تربیت سے عار ی ہے،جسے پتہ نہیں کہ جمہوریت میں آزادی اظہار رائے اور احتجاج کا حق صرف سیاسی جماعتوں ہی کو نہیں ، عام شہریوں کو بھی ہوتا ہے،اگر آئینی حقوق سے انکار کریں گے تو سیاسی نظام کو تباہ کرنے کے مترادف ہوگا،جس کے ملکی سلامتی پر منفی اثرات ہوں گے،کوئی بھی حکومت احتجاج اورجمہوری عمل کو روک نہیں سکتی،اپوزیشن آنے والی حکومت ہوتی ہے اس لیے جمہوری نظام چلتے رہنا چاہیے۔پیر اعجاز ہاشمی نے یقین دہانی کروائی کہ آزادی مارچ پرامن ہوگا ،کارکن اسلام آباد پہنچیں گے،حکومت پریشان نہ ہو،سرکاری اور نجی املاک محفوظ رہیں گی ہم وہ کام نہیں کریں گے جو خود عمران خان کنٹینر پر کھڑے ہو کر کرتے رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ یقینا حکومت نے عوامی سیلاب کے سامنے گھٹنے ٹیک دیئے ہیں ،ابھی تو مارچ شروع نہیں ہوا تو وزیراعظم سمیت وفاقی وزرا ،پی ٹی آئی کے وزرائے اعلیٰ کی ٹانگیں کانپ رہی ہیں،یوٹرن عمران خان کا ٹریڈمارک ہے جو پہلے سخت بیان بازی کرتے اور بعد میں سمجھ آنے پر یوٹرن لے لیتے ہیں،ان کاآزادی مارچ روکنے کے فیصلے پر یوٹرن قابل ستائش ہے، اُنہوں نے اپنی حکومت کے لیے اچھا فیصلہ کیا ہےکیونکہ عوامی سیلاب کے سامنے بند باندھنا حکومت کے بس کی بات نہیں،خاص طور پر جس حکومت کی عوام میں جڑیں نہ ہوں وہ کس طرح ٹھہر سکتی ہے؟اس لئے ہم سمجھتے ہیں کہ حکومت آزادی مارچ کی اجازت نہ بھی دیتی تو یہ ہونا ہی تھا۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور