”یہ میرے بلڈ ٹیسٹ کا رزلٹ ہے یا الیکشن کا؟“ہسپتال میں نواز شریف نے ڈاکٹر سے کیا کہا؟جان کر آپ کو بھی ہنسی آجائے

”یہ میرے بلڈ ٹیسٹ کا رزلٹ ہے یا الیکشن کا؟“ہسپتال میں نواز شریف نے ڈاکٹر سے ...
”یہ میرے بلڈ ٹیسٹ کا رزلٹ ہے یا الیکشن کا؟“ہسپتال میں نواز شریف نے ڈاکٹر سے کیا کہا؟جان کر آپ کو بھی ہنسی آجائے

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن )سابق وزیراعظم میاں نواز شریف نے ڈاکٹروں کے ساتھ مذاق کر کے ماحول کو خوشگوار کردیا ۔

ذرائع نے روزنامہ پاکستان کو بتایا کہ گزشتہ روز جب میاں نواز شریف نے ڈاکٹروں سے اپنی بلڈ رپورٹ کا پوچھا کہ کب آئے گی تو ڈاکٹر نے کہا سر ٹیسٹ کا رزلٹ رات دیر سے آئے گا۔ نواز شریف نے جواباً کہا کہ یہ میرا بلڈ ٹیسٹ کا رزلٹ ہے یا الیکشن کا ؟۔یہ سن کر وہاں موجود لوگوں کے چہروں پر مسکراہٹ آگئی ۔

دوسری جانب گزشتہ روز شہباز شریف کی کچھ لوگوں کے ساتھ بات چیت کے بعد ہسپتال میں موجود نیب حکام کی جانب سے انہیں بلا روک ٹوک ملاقات کے لیے جانے دیا جاتا رہا، رات گئے سے تاحال آنے والے دیگر ملاقاتیوں میں جنید صفدر، راحیل (داماد مریم نواز)، مہر النسا(بیٹی مریم نواز)،شامل تھیں ۔میاں نواز شریف کی ہمشیرہ کوثر بی بی، میاں نواز شریف کی بھابھی بھی ملاقات کرچکے ہیں، میاں نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان اور عطاتارڑ کل رات سے ہی انکے ساتھ موجود ہیں، مریم نواز کی دونوں بیٹیاں آج دن 2 بجے سے شام 6 بجے تک وی وی آئی پی روم میں انکے ساتھ موجود رہیں، نیب حکام کی جانب سے صوبائی وزارت داخلہ کو میاں نواز شریف کی مزید سیکیورٹی کے حوالے سے درخواست بھی کی جا چکی ہے۔آج شہباز شریف کے ساتھ راجہ ظفر الحق، احسن اقبال، خواجہ آصف، ایاز صادق، خرم دستگیر، برجیس طاہر، مرتضی جاوید عباسی ، عطااللہ تارڑ اور مریم اورنگزیب کی نواز شریف سے ملاقات ہوئی۔بتا یا جا رہا ہے کہ مریم نواز کی اپنے والد سے ملاقات بھی شہباز شریف کی کوششوں کا نتیجہ ہے ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس