والد سے ملاقات کیلئے آنے والی مریم نواز کی طبیعت ناساز، سروسز ہسپتال میں داخل کرنے کا فیصلہ

والد سے ملاقات کیلئے آنے والی مریم نواز کی طبیعت ناساز، سروسز ہسپتال میں ...
والد سے ملاقات کیلئے آنے والی مریم نواز کی طبیعت ناساز، سروسز ہسپتال میں داخل کرنے کا فیصلہ

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)سابق وزیراعظم کی صاحبزادیمریم نواز کوطبیعت خرابی کے باعث سروسز ہسپتال میں داخل کرلیا گیا،ان کو نواز شریف کے ساتھ والے کمرے وی آئی پی ٹو میں شفٹ کیا گیا ۔ وزیراعظم عمران خان کی خصوصی ہدایت پر مریم نواز کو میاں نواز شریف سے ملاقات کی اجازت دی گئی تھی،مریم نوازکو خصوصی سیکورٹی کے خصار میں کوٹ لکھپت جیل سے سروسز ہسپتال لایا گیا۔اس موقع پر لیگی کارکنوں کی بڑ ی تعداد ہسپتال کے باہر موجود تھی۔ مریم نواز والد میاں نواز شریف سے ملاقات کیلئے کوٹ لکھپت جیل سے ہسپتال پہنچی تو آبدیدہ ہوگئیں۔ہسپتال آمد پر ڈاکٹرز کی موجودگی میں مریم نواز کی نواز شریف سے ملاقات کرائی گئی،جنہوں نے نواز شریف کی رپورٹس پر مریم نواز کو بریفنگ دی۔

مریم نواز نے ایم ایس سروسز ہسپتال ڈاکٹر محمود ایاز اور ڈاکٹر شمس طاہر سے ملاقات کی ۔ڈاکٹر طاہر شمسی بون میرو ٹرانسپلانٹیشن کے ماہر ہیں۔دوسری جانب ڈاکٹر شمسی نے میاں نواز شریف کے مرض کی تشخیص کرلی ہے جس کے بعد ان کا علاج شروع کردیا گیا ہے ، اس سے قبل نیب حراست میں ماہر ڈینٹسٹ سے نواز شریف کا چیک اپ کرایا گیا،ڈینٹسٹ نے خون بہنے کو مسوڑھوں کی خرابی قرار دیا تھا۔ایم ایس سروسز ہسپتال محمد ایاز نے بتایا کہ نواز شریف کے پلیٹ لیٹس کی تعداد7ہزار ہے۔بلڈ کینسر کی صورت میں بون میرو ٹرانسپلانٹ کیا جاتا ہے ،نواز شریف کو چھٹا پلیٹ لیٹس پیک لگایا گیا ہے۔

واضح رہے کہ احتساب عدالت میں مریم نواز نے بیمار والد سے ملنے کی درخواست کی تھی جسے عدالت نے مسترد کردیا گیا تھا۔ مریم نواز کی آج نواز شریف سے ٹیلیفون پر بات کرائی گئی تھی.

دوسری طرف اس سے پہلے روزنامہ ’’پاکستان ‘‘ نے خبر بریک کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو علاج کیلئے بیرون ملک بھجوانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ذرائع نے روزنامہ ’پاکستان‘ کو بتایا کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف کی خراب صحت کے باعث انہیں بیرون ملک بھجوانے کے بارے میں اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا جس میں ڈاکٹرز کی مشاورت کی روشنی میں فیصلہ کیا گیا کہ سابق وزیر اعظم کو بیرون ملک بھجوادیا جائے،حکومت نے نواز شریف کے علاج کیلئے متعین میڈیکل بورڈ کے علاوہ آغا خان ہسپتال کراچی کے ڈاکٹرز سے بھی مشاورت کی ۔ڈاکٹرز سے رائے لینے کے بعد سابق وزیر اعظم نواز شریف کو لندن شفٹ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے،اُنہیں بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب یا جمعرات کی صبح کو کسی بھی وقت خصوصی طیارے کے ذریعے لندن شفٹ کیا جاسکتا ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور /اہم خبریں /قومی