دھرنوں اور مارچوں سے گریز کیا جائے،حکومت اور اپوزیشن مذاکرات سے معاملات حل کرے:علامہ طاہر اشرفی

دھرنوں اور مارچوں سے گریز کیا جائے،حکومت اور اپوزیشن مذاکرات سے معاملات حل ...
دھرنوں اور مارچوں سے گریز کیا جائے،حکومت اور اپوزیشن مذاکرات سے معاملات حل کرے:علامہ طاہر اشرفی

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)27اکتوبر کو جموں و کشمیر پر بھارتی قبضہ وجارحیت کے خلاف ملک بھر میں یوم سیاہ منایا جائے گا،ہندوستانی آرمی چیف کی کذب بیانی پوری دنیا کے سامنے آگئی ہے،کشمیر کی صورتحال ،تبلیغی اجتماع اورماہ ربیع الاول کی آمد کا تقاضا ہےکہ دھرنوں اورمارچوں سےگریز کیاجائے،حزب اختلاف اور حکومت کے درمیان مذاکرات سے ہی مسائل حل ہونے چاہئیں، دھرنوں اور اجتماعات سے حکومتوں کے خاتمے کے حق میں پہلے تھے نہ اب ہیں ، پاکستان سعودی عرب اورایران کے درمیان مذاکرات کے لیے رابطہ کار اور سہولت کا ربن سکتا ہے،ماہ ربیع الاول و ثانی کو ماہ رحمت للعالمینﷺ کے طور پر منایا جائے گا، 23فروری کو پاکستان علماء کونسل کا یوم تاسیس اور 31مارچ کو چوتھی عالمی پیغام اسلام کانفرنس ہوگی ۔

یہ بات چیئرمین پاکستا ن علماء کونسل اورصدر وفاق المساجد و المدارس پاکستان حافظ محمد طاہر محمود اشرفی ، مولانا نعمان حاشر، مولانا قاسم قاسمی، مولانا طاہر عقیل، مولانا ابوبکر صابری، مولانا حفیظ الرحمٰن، مولانا شہباز احمد، مولانا اسید الرحمٰن ، مولانا شفیع قاسمی نے اسلام آباد پریس کلب میں کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی جارحیت اور انتہا پسندی پوری دنیا کے سامنے بے نقاب ہو چکی ہے، ڈھائی ماہ سے کشمیر میں کرفیو نافذ ہے،عالمی دنیا کی خاموشی افسوس ناک ہے۔ انہوں نے کہا 27اکتوبر کو ہندوستانی قبضہ کے خلاف دنیا بھر میں یوم سیاہ منایا جائے گا، ہندوستان نے مقبوضہ کشمیر کی عوام سے زندگی کا حق چھین لیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ملک میں انتشار اور فساد پھیلانے والی کسی تحریک کا علماء و مشائخ نہ ماضی میں حصہ تھے نہ اب ہیں،حزب اختلاف اور حزب اقتدار باہمی مذاکرات سے مسائل حل کریں ،مولانا فضل الرحمٰن سے بھی اپیل کرتے ہیں کہ تبلیغی اجتماع ماہ ربیع الاول اور کشمیر کی صورتحال کا تقاضاہے کہ مذاکرات سے مسائل کاحل نکالا جائے ،اگر126دن کے عمران خان کے دھرنے سے نوازحکومت نہیں گئی تھی تو عمران خان کی حکومت بھی نہیں جائے گی۔انہوں نے کہا کہ مدارس کو بلاوجہ سیاست میں ملوث کیا جا رہا ہے، مدارس کی تما م تنظیمیں ہر قسم کے سیاسی دھرنوں اورمارچوں سے لا تعلقی کا اعلان کر چکی ہے، مدارس میں مارچ اور دھرنے کے لیے چھٹیاں نہیں دی جائیں گی۔

انہوں نے کہا کہ23فروری کو ملک بھر میں پاکستان علماء کونسل کا یوم تاسیس اور 31مارچ کو پانچویں عالمی پیغام اسلام کانفرنس کنونشن سینٹر اسلام آباد میں ہو گی۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ امت مسلمہ کو جن چیلنجوں کا سامنا ہے ان سے نمٹنے کا واحد راستہ وحدتِ امت ہے، پاکستان سعودی اور ایران کے درمیان سہولت کار کاکردار ادا کر رہا ہے،یہ خوش آئند اقدام ہے،دونوں ملک مذاکرات کے ذریعے اپنے مسائل حل کرنے کے بھی خواہاں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں انتشار اور فسا دپھیلانے کی کوئی بھی سازش کامیاب نہیں ہونے دی جائے گی،افواج پاکستان اور ان کی قیادت کے خلاف پروپیگنڈہ اور الزام تراشی کرنے والے ہندوستان اور اسرائیل کی خدمت کر رہے ہیں، ایسے عناصر کا محاسبہ ہونا چاہیے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد