حکومت کی کارکردگی 

   حکومت کی کارکردگی 
   حکومت کی کارکردگی 

  

تحریر: خواجہ عمران الحق 

مسلم لیگ ن کی حکومت نے وزیر اعظم راجہ محمد فاروق حیدرخان کی قیادت میں چار سال سے زائد کا عرصہ مکمل کیا ہے ، سیاسی اور جمہوری نظام کے تسلسل نے ریاست میں ایسے رویوں کو جنم دیا ہے جو صبر اور ایک دوسرے کے نظریات کو تسلیم کرنے جیسے اعلیٰ اصولوں پر استوار ہیں۔ وزیر اعظم راجہ محمد فاروق حیدرخان کی قیادت میں جب مسلم لیگ ن کی حکومت نے اپنا سفر شروع کیا تو ریاست میں مسائل کا انبار تھا ، قائد پاکستان محمد نواز شریف کے ویڑن کی روشنی میں مسلم لیگ ن نے اپنی تین ترجیحات کو واضح کیا۔ پہلی ترجیح تحریک آزادی کشمیر ، دوسری گڈگورننس اور تیسری تعمیر وترقی۔ چار سال مکمل ہونے پر ہم اللہ تبار ک و تعالیٰ کا شکرادا کرتے ہیں کہ اس نے ہمیں کشمیری عوام کی خدمت کا موقع دیا۔ وزیر اعظم راجہ محمد فاروق حیدرخان نے وزیراعظم کا حلف اٹھانے سے پہلے اس وقت کے وزیر اعظم او ر قائد پاکستان میاں محمد نواز شریف نے دختر پاکستان محترمہ مریم نواز کے ساتھ بیس کیمپ کے دار الحکومت مظفرآباد کا دورہ کیا ، کشمیری عوام کی ایک بڑی تعداد نے اپنے محبوب قائد میاں محمدنواز شریف کا پرتپاک اور والہانہ استقبال کیا۔ اس موقع پر میاں محمد نواز شریف نے کشمیری عوام کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے دو تہائی اکثریت سے مسلم لیگ ن کو کامیاب بنایا۔ اس موقع پراپنے خطاب میں محمد نواز شریف نے کہاکہ ہر پاکستانی کا کشمیریوں کے ساتھ ایک جذباتی رشتہ ہے اور میرا تو کشمیریوں کے ساتھ خون کا رشتہ ہے۔ انہوں نے اس موقع پر لوگوں کو یہ نوید دی کہ مسلم لیگ ن کی حکومت آپ کی تمام محرومیوں کا ازالہ کریگی۔ بعدازاں راجہ محمد فاروق حیدرخان کی سربراہی میں مسلم لیگ ن کی حکومت نے اپنے سفر کا آغاز کیا ، وزیر اعظم راجہ محمد فاروق حیدرخان نے اپنی پہلی ترجیح تحریک آزادی کشمیر کو بہت اہمیت دی، انہوں نے چار سال کے دور اقتدار کے دور ان نہ صرف یورپی ملکوں کے دورے کیے بلکہ کشمیر پر ایک نئے بیانیے کو فروغ دیا جو یہ ہے کہ مسئلہ کشمیر کو دنیا بھر میں اجاگر کرنے کےلئے کشمیریوں کو آگے کیا جائے جو اس مسئلے کے بنیادی فریق ہیں۔ امریکہ سمیت یورپی ملکوں کے دوروں کے دوران وزیر اعظم راجہ محمد فاروق حیدرخان نے بھارتی فوج کی جانب سے انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو اجاگر کیا اور ان پر زور دیا کہ وہ مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوج کے ظلم و ستم پر آنکھیں بند نہ کریں بلکہ اسے انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں سے روکیں۔ وزیر اعظم کی خصوصی ہدایت پر جموں وکشمیر لبریشن سیل کو بہت متحرک کیا گیا اور کشمیر کے حوالہ سے اہم دنوں پر کل جماعتی حریت کانفرنس کے ساتھ ملکر ٹھوس حکمت عملی مرتب کی گئی۔ وزیر اعظم راجہ محمد فاروق حیدرخان نے ایک طرف کشمیر کا مقدمہ پوری صراحت کے ساتھ بیان کیا جبکہ دوسری جانب پاکستان میں سیاسی رواداری کو فروغ دینے کےلئے بھی اقدامات کیے۔ انہوں نے وزیر اعظم عمران خان کو جب کہ وہ یوم یکجہتی کشمیر کے سلسلے میں قانون ساز اسمبلی کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کررہے تھے کہاکہ وہ ملک کے اندر سیاسی ہم آہنگی کو فروغ دیں کیونکہ ایک دوسرے کے خلاف اقدامات کے ذریعے کسی کے ہاتھ کچھ نہیں آئے گا بلکہ اس سے قوم بھی تقسیم ہو گی اور فکری انتشار بھی بڑھے گا۔ وزیر اعظم راجہ محمد فاروق حیدرخان نے یوم استحصال کے موقع پر ایک طرف وزیر اعظم پاکستان کو خطاب کی دعوت دی جبکہ دوسری جانب قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف اورمسلم لیگ ن کے صدر محمد شہباز شریف کو بھی خطاب کی دعوت دی جو پاکستان میں سیاسی رواداری کےلئے ایک دور رس قدم ہو گا۔ ریاست میں گورننس کی اصلاح کےلئے اقدامات اٹھانے کا فیصلہ کیا گیا تو اس میں ایک بہت بڑا اقدام ریاست کی بیورو کریسی کو میرٹ پر کام کرنے کی جانب راغب کرنا تھا اس سلسلہ میں آزادانہ پبلک سروس کمیشن کا قیام عمل میں لا یا گیا جس پر کوئی انگلی نہ اٹھا سکے۔ میرٹ اور اہلیت کی بنیاد پر قائم پبلک سروس کمیشن کے قیام سے ہمارے نوجوانوں کو اپنی صلاحیتوں کے مطابق آگے بڑھنے کے مواقعے ملے ، اس طرح حقدار کو اس کا حق دیا گیا۔ حکومت نے ووٹوں کےلئے اداروں کو استعمال کرنے کی پالیسی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکا کیونکہ اس سے وقتی فائدہ تو ہو جاتا ہے مگر دوررس نتائج حاصل نہیں ہوتے ، اسی کو مد نظر رکھتے ہوئے اساتذہ کرام کی شفاف بنیادوں پر بھرتی کےلئے این ٹی ایس کا نظام متعارف کروایا گیا اور آزادکشمیر کی تاریخ میں پہلی بار اساتذہ کرام کی بھرتی کا عمل این ٹی ایس کے ذریعے مکمل کیا گیا۔ مسلم لیگ ن کی حکومت نے شفافیت کا ایسا ماحول پیدا کیاجس کے تحت بیورو کریسی کو آزادانہ ماحول میں کام کرنے کا موقع میسر آئے۔ عام آدمی کی فلاح و بہبود کےلئے ٹھوس پالیسی مرتب کی گئی اور ایسے منصوبے دیے گئے جس کا فائدہ معاشرے کے کمزور طبقات کو ہوا۔ آزادکشمیر بھر کے ہسپتالوں میں ایمرجنسی علاج معالجے کو مفت کرنا بلاشبہ وزیر اعظم کا ایک بہترین فیصلہ ثابت ہوا اس سے دیہی اور شہری علاقوں میں عام آدمی کو بہت فائدہ پہنچا۔ باغ امراض قلب ہسپتال قائد پاکستان محمد نواز شریف کا اپنے عوام کےلئے ایک تحفہ تھا جس کا اعلان انہوں نے وزیر اطلاعات راجہ مشتاق احمد منہاس کی موجودگی میں کیا، وزیر اعظم نے قائد پاکستان کے اس اعلان کو عملی جامہ پہناکر ایفائے عہد کی بہترین مثال قائم کی۔ قانون ساز اسمبلی سے ناموس رسالت ? کا بل منظور ہونا قانون ساز اسمبلی کے ہر رکن کےلئے رہتی دنیا تک مبارک کا ایک استعارہ رہے گا۔ آزادکشمیر شائد وہ اہم خطہ ہے جہاں اس وقت کوئی سیاسی قیدی نہیں ہے اور نہ ہی کسی کو سیاسی وابستگی کی بنیاد پر نشانہ بنایا گیا جو مسلم لیگ ن کی حکومت کے جمہوری عزم کا ایک عمدہ مظاہرہ ہے۔ ان چارل سال کے دوران کسی سرکاری ملازم کو اس کی سیاسی وابستگی کی بنیاد پر ہراساں نہیں کیا گیا جو گزشتہ ادوار میں ایک معمول رہا ہے۔ کرونا وبائ کے دوران وزیر اعظم راجہ محمد فاروق حیدرخان کی سرابراہی میں مسلم لیگ ن کی حکومت نے بہترین اقدامات کیے۔ وزیر اعظم نے اس اہم وقت میں وزیر اعظم ہاﺅس کی عمارت کو ہسپتال کےلئے وقف کیا اور ہمہ وقت مستعد رہ کر اپنے رفقاءکا حوصلہ بڑھاتے رہے جس کے نتیجے میں آزادکشمیر بڑی حد تک کرونا کے آسیب پر قابو پانے میں کامیاب رہا ۔ آزادکشمیرمیں بائیو میٹرک سکولوں میں نصب کرنے سے تعلیمی اداروں کو بڑی حد تک منظم کیا گیا جس کے تدریسی عمل پر خوشگوار اثرات مرتب ہوئے۔ مسلم لیگ ن کی حکومت نے بیروزگاری کے خاتمے کےلئے جانور پالنے کےلئے لائیوسٹاک کی مد میں بلا سود قرضوں کا نظام متعارف کرایا جبکہ نوجوانوں کو اپنا روزگار شروع کرنے کےلئے بھی چھوٹے چھوٹے قرضوں کا پروگرام شروع کیاگیا جس میں اخوت سے بھی مدد لی گئی۔ ایک خوشحال اور مضبوط آزادکشمیر کےلئے مسلم لیگ ن کی حکومت کو یہ اعزاز بھی حاصل ہوا کہ اسنے خسارے سے پاک بجٹ پیش کیا۔ آزادکشمیر بھر سے محاصل کی ریکارڈ تعداد حاصل ہوئی جو مسلم لیگ ن کے طرز حکومت پر عوام کے اعتماد کی مظہر ہے۔ مسلم لیگ ن کی حکومت نے ڈویژن اور ضلع کی سطح پر تعمیر وترقی کا انقلاب برپا کیا۔ ڈویژن کو ڈویژن سے ملانے والی بڑی سڑکوں ، بین الاضلاعی سڑکات

 اورتحصیل سے تحصیل کو ملانے والی سڑکوں کے علاوہ دور افتادہ اور پسماندہ علاقوں کو سڑکوں کی فراہمی پر خاص توجہ دی گئی جس سے عوام کو سہولت حاصل ہوئی۔ آزادکشمیر کے حلقہ جات میں اضافے سے عوام کے حق حکمرانی میں بہتری لائی گئی ہے۔ ترقی اور خوشحالی مسلم لیگ ن کا خاصا ہے جس نے قائد پاکستان مسلم لیگ ن محمد نواز شریف کے ویژن کے مطابق آگے بڑھنے کا تہیہ کررکھا ہے جس کا مقصد کشمیری عوام کی ترقی اور خوشحالی ہے۔

۔

  نوٹ:یہ بلاگر کا ذاتی نقطہ نظر ہے جس سے ادارے کا متفق ہونا ضروری نہیں ۔

۔

اگرآپ بھی ڈیلی پاکستان کیساتھ بلاگ لکھنا چاہتے ہیں تو اپنی تحاریر ای میل ایڈریس ’zubair@dailypakistan.com.pk‘ یا واٹس ایپ "03009194327" پر بھیج دیں.

 

مزید :

بلاگ -