ایران :جامعات نے 80 شعبوں میں خواتین کے داخلے کو ممنوع قرار دیدیا

ایران :جامعات نے 80 شعبوں میں خواتین کے داخلے کو ممنوع قرار دیدیا

تہران (اے پی پی) ایران کی تین درجن سے زائد جامعات نے 80 شعبوں میں خواتین کے داخلے کو ممنوع قرار دیدیا ہے۔ برطانوی ریڈیو کے مطابق ان شعبوں میں نیوکلیئر فزکس ، کمپیوٹر سائنس ، بزنس، علم آثار قدیمہ اور انگریزی ادب کے شعبے شامل ہیں۔ اس اقدام کی کوئی وجہ نہیں بتائی گئی۔ ایران میں انسانی حقوق کی نوبل انعام یافتہ وکیل شیریں عبادی نے کہا ہے کہ یہ اقدام حکومت کی جانب سے خواتین کو تعلیم سے دور رکھنے کی پالیسی کا حصہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت مختلف طریقوں سے خواتین کی تعلیم تک رسائی کو محدود کررہی ہے تاکہ انہیں معاشرے کا فعال حصہ بننے سے روکا جاسکے اور انہیں گھر میں واپس بٹھا دیا جائے۔ ایران خواتین کو یونیورسٹی کی سطح پر تعلیم کی اجازت دینے والا مشرق وسطیٰ کا پہلا ملک تھا۔1979 کے انقلاب کے بعد حکومت نے لڑکیوں کی اعلیٰ تعلیم کے اداروں میں داخلے کے سلسلے میں بہت کوششیں کیں۔

مزید : عالمی منظر