دوہری شہریت کے حوالے سے عدالتی فیصلہ خوش آئند ہے، وسیم اختر

دوہری شہریت کے حوالے سے عدالتی فیصلہ خوش آئند ہے، وسیم اختر

ؒٓؒٓٓلاہور(نمائندہ خصوصی(امیر جماعت اسلامی پنجاب ڈاکٹر سید وسیم اختر نے کہا ہے کہ دوہری شہریت کے حوالے سے سپریم کورٹ کا فیصلہ خوش آئند ہے۔کوئی شخص جو دوسرے ملک کے ساتھ وفاداری کا حلف رکھتا ہو وہ پاکستان کے مفادات کا تحفظ نہیں کرسکتا۔مشیروں کوبھی اس دفعہ کے زمرے میں لانے کے لئے آئین میں ترمیم اور قانون سازی کی جانی چاہئے۔پاکستان میں درآمد ی سیاستدانوں کا باب ہمیشہ کے لئے ختم ہونا چاہئے۔انہوں نے کہاکہ اگر حکمرانوں نے شفاف انتخابات نہ کروائے تو نتائج کے ذمہ دار وہ خود ہوں گے۔جن لوگوں نے لوٹنے والوں کو تحفظ فراہم کیااور ان کا ساتھ دیا وہ جتنے مرضی چہروں پر نقاب بدل لیں عوام ان کو پہچان چکے ہیں۔ساڑھے چار سالہ دور اقتدار پاکستانی تاریخ کا بدترین دور ہے۔جس میں کسی ایک شعبے میں بھی تسلی بخش کارکردگی دیکھنے میں نہیں آئی۔کرپشن اپنی تمام حدیں پار کر چکی ہے۔صرف ایک شخص کی کرپشن چھپانے کے لئے دو سال تک اداروں کے درمیان کشیدگی کی فضاءپیدا کی رکھی۔انہوں نے کہاکہ کراچی کے حالات کو خراب کرنے والے حکومت میں شامل ہیں۔پوری دنیاکی نگاہیں کراچی اور بلوچستان میں امن و امان کے حالات پر مرکوز ہیں جبکہ حکومت پاکستان خواب خرگوش میں ہے۔لوگوں کی ٹارگٹ کلنگ کی جاری ہے، اغوا اور مسخ شدہ لاشوں کا ملنا معمول بن چکا ہے۔ڈاکٹر سید وسیم اختر نے مزید کہا کہ موجودہ ملکی حالات میں علماءکرام کی ذمہ داری بہت بڑھ گئی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1