اسلام مخالف فلم کیخلاف مظاہروں میں لوٹ مار،تاجروں کو لاکھوں کا نقصان

اسلام مخالف فلم کیخلاف مظاہروں میں لوٹ مار،تاجروں کو لاکھوں کا نقصان

لاہور( اسد اقبال) صوبائی دارالحکومت میں گذشتہ روز ناموس رسالت ﷺ کیلئے نکالے گئے مظاہروں وجلوسوں میں اکثر مقامات پر تاجروں کو بھی جلوس میں شامل شرپسند عناصر کی طرف سے لاکھو ں روپے کے نقصان کا سامنا کرنا پڑا۔شر پسند افراد نے ایجرٹن روڈ پر کروڑوں روپے کی نجی املاک کو نہ صرف نقصان پہنچایا بلکہ عمارتوں کے شیشے توڑتے ہوئے قیمتی سامان لوٹ کر لے گئے۔ تفصیلات کے مطابق یوم عشق رسولﷺ کے موقع پر صوبائی دارالحکومت کے ہزاروں شہریوں نے گستاخانہ فلم پر اپنا احتجاج ریکارڈ کرواتے ہوئے امریکن قونصیلٹ کی جانب ریلیوں کی شکل میں رُخ کیا۔جلوس میں چند شر پسند عناصر نے ایجرٹن روڈ پر واقع نیشنل وملٹی نیشنل کمپنیوں اور شادی ہال کی عمارتوں پر لگے قیمتی شیشے پتھر مار کر توڑ دئیے جبکہ لوٹ مار کرتے ہوئے قیمتی سامان اور کمپیوٹر سمیت دیگر لاکھوں روپے کی اشیاءلوٹ کر فرار ہوگئے۔ جن املاک کو نقصان پہنچایا گیا۔اُن میں ایسوسیٹس ہاﺅس،سٹار ٹیکنالوجی، سمنز فرنچائزڈ اور اتفاق شادی ہال شامل ہے۔نیشنل وملٹی نیشنل کمپنیوں کے انتظامی اہل کاروں محمد صدیق،اظہر علی،منیر احمد ودیگر نے روزنامہ’پاکستان‘ کو بتایا کہ گذشتہ روزاحتجاجی مظاہروں میں مظاہرین میں شامل شرپسند افراد نے عمارتوں میں لگے قیمتی شیشوں پر پتھراﺅ کرتے ہوئے لاکھوں روپے کا نقصان کیا ہے بلکہ عمارتوں میں داخل ہوکر کمپیوٹر،لیپ ٹاپ، فیکس ودیگر قیمتی سامان لوٹ کر فرار ہوگئے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ محب مصطفی ﷺ رکھنے والوں کا یہ شیوہ نہیں کہ وہ احتجاج کے دوران شہریوں کی نجی املاک کو نقصان پہنچائیں۔ یہ سب کچھ شرپسند عناصر نے کیا ہے۔اُنہوں نے وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف سے نقصان کے ازالہ کی اپیل ہے

مزید : صفحہ آخر