برطانوی ڈنڈے کے ”یار“ہیں

برطانوی ڈنڈے کے ”یار“ہیں
برطانوی ڈنڈے کے ”یار“ہیں

  


 لندن (بیورورپورٹ)برطانیہ کے 48فیصد عوام نے ایک گیلپ سروے میں سزائے موت کے حق میں رائے دے دی ہے جبکہ 44فیصد نے سزائے موت بحال نہ کرنے کے حق میں ووٹ دیا ہے، مانچسٹر میں دو خواتین پولیس افسران کی ہلاکت کے بعد برطانوی عوام نے وزیر داخلہ تھریسا مئے سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ 1965میں ختم کی گئی سزائے موت کا قانون دوبارہ بحال کر دیں اور پولیس کو ڈنڈے کی بجائے بندوقیں دی جائیں، دوسری طرف وزیر داخلہ تھریسا مئے نے سزائے موت کے قانون کو بحال کرنے کی مخالفت کی ہے، برطانوی عوام کا موقف ہے کہ برطانیہ میں بڑھتے ہوئے جرائم اور قتل وغارت گری سے نمٹنے کے لیے سزائے موت کا قانون بحال کرنا وقت کی اہم ضرورت ہے وگرنہ برطانوی معاشرہ ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو جائیگا ،اسلامی ممالک جہاں سزائے موت دی جاتی ہے میں جرائم نہ ہونے کے برابر ہیں جو شخص کسی کی جان لیتا ہے اسے سزائے موت دینا ہی انصاف کے برابر ہے ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس