نیوی وار کالج کے زیر تربیت افسران کا ایوان کارکنان تحریک پاکستان کا دورہ

نیوی وار کالج کے زیر تربیت افسران کا ایوان کارکنان تحریک پاکستان کا دورہ

  



لاہور (اپنے خبر نگار سے) پاکستان نیوی وار کالج ،لاہور میں زیر تربیت ملکی و غیرملکی افسران کے ایک وفد نے گزشتہ روز ایوان کارکنان تحریک پاکستان ،لاہور کا دورہ کیا۔ انہوں نے ایوان میں موجود تحریک پاکستان کی نادر و نایاب تصویری گیلری کا وزٹ کیا اور اس میں گہری دلچسپی کا اظہار کیا۔ اس موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے تحریک پاکستان کے کارکن اور وائس چیئرمین نظریۂ پاکستان ٹرسٹ پروفیسر ڈاکٹر رفیق احمد نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے پاکستان کو ہر طرح کے وسائل سے نواز رکھا ہے اور اس میں آگے بڑھنے کی تمام صلاحیتیں موجود ہیں۔ ہمارے پاس زبردست انسانی وسائل بھی موجود ہیں جن میں اکثریت نوجوانوں کی ہے جن کی صلاحیتوں کو صحیح رخ پر ڈال کربہترین نتائج حاصل کیے جا سکتے ہیں۔ پاکستان اپنے منفرد محل وقوع کی وجہ سے دنیا میں خاص اہمیت رکھتا ہے۔ پاکستان کی سٹریٹجک اہمیت بہت زیادہ ہے اور پاکستان کی آبی سرحدوں کی حفاظت کرنا آپ کی ذمہ داری ہے۔

انہوں نے کہا پاکستان خاص محل وقوع کے علاوہ شاندار تاریخ بھی رکھتا ہے۔ ہمارا وژن بہت اعلیٰ ہے‘ جس قوم کے پاس وژن نہ ہو وہ ترقی نہیں کر سکتی ہے۔

یہ وژن اللہ تعالیٰ نے نبی کریمؐ کے ذریعے ہمیں دیا ۔ نماز ،روزہ، زکوٰۃ اور حج محض عبادات نہیں بلکہ کردار سازی کا بہترین ذریعہ بھی ہیں۔ قیام پاکستان کے وقت ہمارے ایمان نے ہی ہمیں یہ حوصلہ عطا کیا کہ ہم اپنی بقاء کو یقینی بنا سکیں ۔انہوں نے کہا کہ1857ء سے 1947ء تک برصغیر میں مختلف تحریکیں چلتی رہیں ‘ 1930ء میں علامہ محمد اقبالؒ نے الگ وطن کا تصور پیش کیا۔ 1940ء میں قرارداد پاکستان کی منظوری سے مسلمانان برصغیر نے اپنے واضح نصب العین کا تعین کیا۔ 1940ء سے 1947ء تک تحریک پاکستان عروج پر تھی اور بالآخر قائداعظمؒ کی ولولہ انگیز قیادت میں اگست1947ء کو پاکستان معرض وجود میں آگیا۔قیام پاکستان کے بعد قائداعظمؒ نے نوزائیدہ مملکت کی تعمیر وترقی کیلئے شب وروز کام کیا ۔قیام پاکستان کے وقت ہم صفر تھے لیکن آج اللہ تعالیٰ کے فضل وکرم سے مختلف شعبوں میں حیرت انگیز ترقی کی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کے زیر اہتمام 80سے زائد مختلف سرگرمیاں جاری ہیں۔یہاں سیمینارز، کانفرنسیں، قومی ایام پر خصوصی تقریبات، فکری نشستیں،اہم قومی موضوعات پرلیکچرز اور نشستیں منعقد کی جاتی ہیں ۔ہمارا فوکس نئی نسلیں ہیں اور ہم ان کی نظریاتی تعلیم و تربیت پر بطور خاص توجہ دے رہے ہیں۔ نظریاتی سمر سکول بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے جبکہ پاکستان آگہی پروگرام کے تحت لاکھوں طلبا و طالبات تک ہمارا پیغام پہنچ چکا ہے کیپٹن سہیل عزمی نے کہا یہاں آکر ہمیں بڑی خوشی ہوئی اور ہمارے حوصلے بلند ہوگئے ہیں۔ یہاں ہم ان لوگوں سے مل رہے ہیں جنہوں نے بذات خود تحریک پاکستان میں حصہ لیا۔انہوں نے کہا آج بعض لوگ یہ کہتے ہیں کہ بنگلہ دیش کے قیام کے ساتھ ہی دوقومی نظریہ بھی ختم ہو گیا تھا ۔ ایسا بالکل نہیں ہے‘ دوقومی نظریہ نہ صرف زندہ ہے بلکہ وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ مزید ابھر کر سامنے آئے گا سیکرٹری نظریۂ پاکستان ٹرسٹ شاہد رشید نے کہا کہ پاک فوج ہمارا فخر اور پاکستان کی جغرافیائی سرحدوں کی محافظ و پاسبان ہے۔ ہماری بہادر افواج نے دفاع وطن کیلئے لازوال قربانیاں دی ہیں ۔پاک فوج ہماری آزادی کی ضامن ہے۔پروگرام کے آخر میں پروفیسر ڈاکٹر رفیق احمد نے کیپٹن سہیل عزمی کو پروگرام میں شرکت کی یادگاری شیلڈ اور نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کی مطبوعات کا سیٹ پیش کیا جبکہ کیپٹن سہیل عزمی نے پاکستان نیوی کی جانب سے ڈاکٹر رفیق احمد اور شاہد رشید کو شیلڈ دی۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...