پولیس کے ہاتھوں سیاہ فام شخص کی ہلاکت پر احتجاج

پولیس کے ہاتھوں سیاہ فام شخص کی ہلاکت پر احتجاج

  



کیرولینا (اے پی پی) امریکی ریاست شمالی کیرولینا کے شہر شارلٹ میں سیاہ فام شخص کی پولیس کے ہاتھوں ہلاکت کے بعد جاری مظاہروں کے دوسرے روز ایک شخص گولی لگنے سے ہلاک ہوگیا ،صدر براک اوباما نے تلسا اور شارلٹ کے میئرز سے کہا ہے کہ مظاہروں پر تحمل کا مظاہرہ کریں جبکہ شمالی کیرولینا کے گورنر نے شہر میں ایمرجنسی نافذ کردی ۔برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق شمالی کیرولینا کے گورنر پیٹ مکرورے نے شہر میں ہنگامی حالت نافذ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کسی کو بھی شہریوں کے جان و مال اور املاک کو نقصان پہنچانے اور افراتفری کی اجازت نہیں دی جائے گی۔شارلٹ شہر کے حکام کے مطابق ہلاک ہونے والا شخص شہریوں کے درمیان پیش آنے والے حادثے میں گولی لگنے سے ہلاک ہوا ہے۔وائٹ ہاؤس کے مطابق صدر اوباما نے تلسا اور شارلٹ کے میئرز سے ملاقات کی جس میں انہوں نے مظاہروں پر تحمل کا مظاہرہ کرنے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔انہوں نے دونوں میئرز سے کہا کہ اپنے شہروں میں ہونے والے مظاہروں کے حوالے انہیں تازہ ترین صورتحال سے آگاہ کرتے رہیں اوباما نے اس واقعے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے میئرز کو انتظامی معاونت فراہم کرنے کی یقین دہانی کرائی۔ واضح رہے کہ منگل کو 43 سالہ کیتھ لیموں سکاٹ کو پولیس اہلکار نے گولی مار دی تھی جس کے بعد وہ ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا تھا۔ان کی ہلاکت کے بعد شہر میں شروع ہونے والے مظاہروں میں 12 پولیس اہلکار زخمی ہوئے ہو گئے تھے۔

مزید : عالمی منظر


loading...