پنجاب حکومت اور عالمی بینک کے مابین زرعی شعبہ کی پائیدار ترقی کیلئے معاہدہ

پنجاب حکومت اور عالمی بینک کے مابین زرعی شعبہ کی پائیدار ترقی کیلئے معاہدہ

  



لاہور (جنرل رپورٹر)پنجاب حکومت اور عالمی بینک کے مابین زراعت کی ترقی ، زرعی معیشت مستحکم کرنے اور پانی کے وسائل کے بہترین استعمال کے حوالے سے تعاون کے معاہدے پر دستخط کئے گئے۔ماڈل ٹاؤن میں منعقدہ تقریب کے مہمان خصوصی وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف تھے۔پنجاب حکومت کی جانب سے سیکرٹری زراعت کیپٹن (ر) محمد محمود جبکہ عالمی بینک کے پاکستان میں کنٹری ڈائریکٹر پچا موتھو الانگو نے معاہدے پر دستخط کئے۔معاہدے کے تحت عالمی بینک صوبے میں زراعت کے فروغ ، فی ایکڑ پیداوار میں اضافے ، زرعی معیشت کو مستحکم کرنے اورپانی کے وسائل کے درست استعمال کیلئے پنجاب حکومت کو تکنیکی معاونت فراہم کرے گا۔عالمی بینک زراعت کو پائیدار بنیادوں پر فروغ دینے کے لئے جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کے حوالے سے بھی تعاون کرے گا۔وزیر اعلی محمد شہباز شریف نے معاہدے پر دستخط کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت اور عالمی بینک کے درمیان ہونے والے معاہدہ خوش آئند ہے جس پر عملدرآمد سے زرعی معیشت اور دیہات کی خوشحالی کو فروغ حاصل ہو گا ۔ انہوں نے کہا کہ عالمی بینک سے طے پانے والا معاہدہ زرعی ترقی کے لئے ایک سنگ میل ہے ۔عالمی بینک دنیا خصوصاً برازیل کے کامیاب ماڈل کو پنجاب کے زرعی شعبہ کی ترقی کیلئے متعارف کرانے میں معاونت فراہم کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ متعلقہ وزیر ، سیکرٹری اور متعلقہ ادارے آگے بڑھیں اور محنت کے ساتھ زرعی شعبے کے استحکام کے لئے چیلنج قبول کریں ۔معاہدے کے روڈ میپ پرعملدرآمد کیلئے وزیر اعلی شہباز شریف کی سربراہی میں مشترکہ سٹیئرنگ کمیٹی تشکیل دی گئی اور یہ کمیٹی روڈ میپ کا تعین کر کے اس پر تیز رفتاری سے عملدرآمد کرے گی۔کنٹری ڈائریکٹر عالمی بینک نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پروگرام پر عملدرآمد کیلئے چھ ہفتے میں ٹائم لائن طے کر لی جائیں گی۔انہوں نے کہا کہپنجاب میں زراعت کے شعبے میں بہت پوٹینشل موجود ہے اور اس پوٹیشنل کو بروئے کار لانے کے لئے پنجاب حکومت کے ساتھ ملکر کام کریں گے۔ صوبائی وزراء یاور زمان، ڈاکٹر فرخ جاوید، عائشہ غوث پاشا، چیف سیکرٹری ، چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات، عالمی بینک کے سینئر ڈائریکٹر برائے زراعت جیورگن ویگیل اور دیگر اعلی حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔ وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف سے لاہور میں تعینات ہونے والے ترکی کے پہلے قونصل جنرل سردار ڈینیز نے ملاقات کی جس میں باہمی دلچسپی کے امور اور پاک ترک تعلقات کے فروغ پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیراعلیٰ نے ترک قونصل جنرل کو لاہور میں تعینات ہونے پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور ترکی تاریخی برادرانہ تعلقات میں بندھے ہوئے ہیں اور دونوں ملکوں کے عوام کے دل ایک ساتھ دھڑکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ترکی کی حکومت اور عوام نے مشکل کی ہر گھڑی میں پاکستان کا بھرپور ساتھ دیا ہے اور اہل پاکستان ترکی کے ساتھ اپنی دوستی پر فخر کرتے ہیں۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ پاکستان اور ترکی کے مابین تعلقات نئی بلندیوں کو چھو رہے ہیں اور آنے والے وقت میں معاشی و تجارتی دوستی میں مزید اضافہ ہوگا۔ ترکی کے قونصل جنرل سردار ڈینیز نے اس موقع پر بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ترکی پاکستان کے ساتھ تعلقات کو بہت اہمیت دیتا ہے۔ ترک قیادت اور عوام وزیراعلیٰ شہبازشریف کی غیرمعمولی صلاحیتو ں کے معترف ہیں۔ وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان کے باشعور عوام ترقی دشمن طرز سیاست سے متنفر اور بیزار ہو چکے ہیں اور وہ دھرنے یا مارچ نہیں بلکہ ترقی و خوشحالی چاہتے ہیں اور وزیراعظم محمد نوازشریف کی قیادت میں پاکستان مسلم لیگ(ن) کی حکومت نے ترقی اورخوشحالی کا جو سفر شروع کررکھا ہے وہ پہلے سے زیادہ عزم اور محنت کے ساتھ آگے بڑھتا جائے گا۔ان عناصر کو یہ بات اچھی طرح ذہن نشین کرلینی چاہئے کہ حکومت اور اقتدار کا حصول سیاستدان کی منزل نہیں بلکہ عوامی خدمت کا ذریعہ ہوتا ہے اوریہی وجہ ہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے عوامی خدمت کے ریکارڈ قائم کئے ہیں اورفلاح عامہ کے منصوبوں کوانتہائی برق رفتاری اور اعلی معیار کے ساتھ مکمل کیا جارہاہے۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے ان خیالات کا اظہار رکن قومی اسمبلی رضا حیات ہراج سے گفتگو کرتے ہوئے کیا جنہوں نے ان سے ملاقات کی۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف سے وفاقی وزیرنیشنل فوڈ سکیورٹی سکندر حیات بوسن نے ملاقات کی،جس میں زراعت کی ترقی اورچھوٹے کاشتکار کی خوشحالی کے پروگرامز پر بات چیت ہوئی۔وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ(ن) کی حکومت زراعت کے فروغ اورچھوٹے کاشتکار وں کو ریلیف فراہم کرنے کیلئے انقلابی حکمت عملی پر عمل پیرا ہے،جس کے تحت کاشتکاروں کو بلا سود قرضوں کی فراہمی کے پروگرام پر عملدر آمد کا آغاز کردیا گیاہے اورملک کی تاریخ میں پہلی بار چھوٹے کاشتکاروں کواربوں روپے کے بلاسود قرضے فراہم کیے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ 100 ارب روپے کے تاریخی کسان پیکیج کے بھی زرعی شعبے کی ترقی پر انقلاب آفرین اثرات مرتب ہوں گے۔وفاقی اور پنجاب حکومت کے کسان پیکیجزسبز انقلاب کی جانب ایک اہم قدم ہے ۔بجلی کے نرخوں میں رعایت ،زرعی لوازمات اورکھادوں پر سبسڈی سے کاشتکار مستفید ہورہا ہے۔انہوں نے کہا کہ چھوٹے کاشتکار کو اس کے پاؤں پر کھڑا کریں گے۔

مزید : صفحہ اول


loading...