اشتعال انگیز تقاریر، مختلف مکاتب فکر کے 48 علماء کے ضلع خانیوال کی حدود میں داخلے، قیام پر فوری پابندی عائد

اشتعال انگیز تقاریر، مختلف مکاتب فکر کے 48 علماء کے ضلع خانیوال کی حدود میں ...

  



خانیوال (نمائندہ پاکستان، بیورو نیوز، ڈسٹرکٹ رپورٹر )ڈی سی او زید بن مقصودنے ایک حکم نامے کے ذریعے قابل اعتراض اور اشتعال انگیز تقاریر کرنے والے مختلف مکاتب فکر کے 48علماء کرام کے ضلع خانیوال کی ریونیو حدود میں داخلے اور قیام پر فوری طور پر پابندی عائد کر دی ہے اس حکم کا اطلاق آئندہ 60دنوں تک لاگو رہے گا ۔جن علما (بقیہ نمبر49صفحہ12پر )

کرام پر پابندی عائد کی گئی ہے ان میں مولانا شبیر احمد عثمانی، مولانا نعمان ضیا ء فاروقی ( سمندری)،مولانا ریحان محمود ولد ضیا ء الرحمن فاروقی ، مولانا محمد اسماعیل ( سمندری ) آف فیصل آباد، مولانا اورنگزیب فاروقی ، سعید ارشاد الحسینی ، عرفان حیدر ( نوحہ خواں)، علامہ محمد امین شہیدی آف کراچی، مولانا عالم طارق ، مسرور نواز ولد مولانا حق نواز جھنگوی ،محمد طاہر جھنگوی ، مولانا محمدآصف مایا ، محمد منشاء جھنگوی ، غلام جعفر اٹھارہ ہزاری ، اظہر حسین کاظمی آف جھنگ ، مولانا معاویہ طارق ، مولانا نزا کت حسین بلوچ ، مفتی محمد احسن عالم آف ساہیوال ، مولانا محمد الیاس گھمن ، محمد حسین ڈھکو آف سرگودھا ، مولانا عبید الرحمن ضیا ء ( کمالیہ)، مولانا محمد احمد لدھیانوی آف ٹوبہ ٹیک سنگھ ، غلام جعفر جتوئی،مولانا خادم حسین خورشید، مولانا عبد الرشید ترابی اور مولانا محمد یوسف رضوی آف لاہور ، مولانا مسعود الرحمن عثمانی ،مولانا عبد الجلیل نقوی ، علامہ ناصر عباس ، علامہ ساجد حسین نقوی آف راولپنڈی ، مولانا سید کفایت حسین نقوی ، سلطا ن محمود ضیاء ، مولانا عطاء المنان ، مولانا شوکت رضا شوکت ، گلفام حسین نقوی، مولانا تقی نقی ، مولانا محمد نواز سیال ( صادق آباد ملز)،قاضی غلام شبیر علوی اوراقتدار حسین نقوی آف ملتان، مولانا سیف اللہ فاروقی ، مولانا محمد نواز بلوچ ، مولانا منظور احمد اور مولانا عبد الرؤف یزدانی ،مولانا عبد الناصر آف گجرانوالا،مولانا عبد الحمید وٹو آف حافظ آباد ، مولانا مسعود اظہر اور مولانا عبد الرؤف آف بہاولپور، خدا بخش قیصر آف بھکر شامل ہیں ۔

پابندی

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...