لاکھوں روپے کی مبینہ کرپشن میں ملوث ڈی پی او ریلوے کا تبادلہ

لاکھوں روپے کی مبینہ کرپشن میں ملوث ڈی پی او ریلوے کا تبادلہ

  



ملتان(جنرل رپورٹر)چھوٹا کرے تو گھر کو جائے بڑا کرے تو موج منائے‘لاکھوں روپے کی مبینہ کرپشن میں ملوث ڈی پی او ریلوے شاہد رضا کا تبادلہ کردیا گیا جبکہ اضافی چارج ڈی ٹی او جمشید عالم کو دیدیا گیا ہے ذرائع کے مطابق ریلوے انتظامیہ نے کرپشن کے خلاف کارروائی کی انوکھی منطق اپنا رکھی ہے ڈویژنل پرسانل آفیسر شاہد رضا پر پوائنٹس مینوں کی بھرتی میں مبینہ طور پر 3سے 5لاکھ روپے فی(بقیہ نمبر12صفحہ12پر )

آسامی رشوت وصول کی جبکہ افسرا ن کے عزیز و اقارب کو بھی نوازنے کی منصوبہ بندی کی جارہی تھی تاہم ہیڈ کوارٹر نے اس ضمن میں ملنے والی شکایات پر فوری نوٹس لیتے ہوئے بھرتیوں کا عمل روکنے کے احکامات جاری کردےئے تھے اور کرپشن میں ملوث افسران کے خلاف بھی تحقیقات کا حکم دیا تھا معلوم ہوا ہے کہ کرپشن کے ماسٹر مائنڈ شاہد رضا کا تبادلہ کردیا گیا جبکہ ڈی ٹی او جمشید عالم کو اضافی چارج دیدیا گیا ہے جس پر ریلوے کے نچلے طبقہ کے ملازمین میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے ملازمین کا کہنا ہے کہ اگر کسی عام ملازم پر چند روپوں کی کرپشن کا بھی الزام لگ جائے تو نہ صرف اسے معطل کرکے گھر بھجوادیا جاتا ہے بلکہ محکمانہ کارروائی بھی اس کے خلاف کی جاتی ہے مگر لاکھوں روپے کی کرپشن ثابت ہونے پر بھی افسران کا صرف تبادلہ کرکے معاملہ نمٹا دیا جاتا ہے حالانکہ وہ افسر دوسرے ضلع میں جانے کے بعد بھی افسر ہی لگ جاتا ہے اور وہاں بھی کرپشن کرتا ہے اگر ریلوے انتظامیہ نے محکمہ کو منافع بخش بنانا ہے تو کرپٹ افسران کا صرف تبادلہ کرنے کی بجائے معطل کرکے ان کے خلاف محکمانہ کارروائی کی جائے تاکہ کرپٹ عناصر کا سدباب ہوسکے۔

تبادلہ

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...