تصدیقی عمل میں 60ہزار شناختی کارڈ جعلی ثابت ہوگئے، پیسے لیکر کارڈ اور پاسپورٹ بنانے والے غداری کے مرتکب ہوئے: چودھری نثار

تصدیقی عمل میں 60ہزار شناختی کارڈ جعلی ثابت ہوگئے، پیسے لیکر کارڈ اور پاسپورٹ ...
تصدیقی عمل میں 60ہزار شناختی کارڈ جعلی ثابت ہوگئے، پیسے لیکر کارڈ اور پاسپورٹ بنانے والے غداری کے مرتکب ہوئے: چودھری نثار

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار نے کہا ہے کہ اب تک سوا ٓااٹھ کروڑ کارڈز کی تصدیق ہو چکی ہے۔تصدیقی عمل کے دوران اب تک 60ہزارشناختی کارڈ جعلی ثابت ہو چکے ہیں جن میں سے50ہزار کارڈز بلاک کر دیئے ہیں۔باقی دس کی تصدیق کا عمل جاری ہے۔پیسے لے کے شناختی کارڈ اور پاسپورٹ بیچنے والوں نے ملک سے غداری کی۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے چودھری نثار نے کہا کہ غیر ملکیوں نے 29ہزار پاکستانی شناختی کارڈ حاصل کر رکھے ہیں۔وی آئی پیز کے دو ہزار سے زائد شناختی کارڈز منسوخ کر دیئے ہیں۔ان غیر ملکیوں نے رضاکارانہ طور پر یہ کارڈ واپس کئے۔انہوں نے کہا کہ ملا منصور کو جعلی شناختی کارڈ بنانے کی وجہ سے ہمیں اقوام متحدہ میں صفائیاں دینا پڑ رہی ہیں۔جعلی شناختی کارڈ بنانے والے نادرا اہلکاروں کے خلاف سخت ایکشن لیا گیا ہے۔ متعدد اہلکاروں کو گرفتار اور معطل کیا گیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ نادرا اور پاسپورٹ دفاتر میں اندھیر نگری ختم کر دیں گے۔پیپلز پارٹی کے دور میں ایک بھی پاسپورٹ منسوخ نہیں کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ جعلی پاسپورٹس کیخلاف بھی کریک ڈاون شروع کیا ہوا ہے۔اب ای پاسپورٹس کا اجرا کرنے کا پروگرام بنا لیا ہے جو جلد ہی شروع کر دیئے جائیں گے۔ہم مختلف شہروں میں نئے سنٹر کھول رہے ہیں۔ان سنٹرز کے کھلنے سے لوگوں کو کافی سہولت ملے گی۔ ان کو دھکے نہیں کھانا پڑیں گے۔ نادرا کی مانیٹرنگ ہیلپ لائن کا اعلان اگلے ہفتے کر دیا جائے گا۔

مزید : قومی