پٹرولیم مصنوعات پرسیلز ٹیکس میں اضافہ کیخلاف درخواستوں پر فیصلہ محفوظ

پٹرولیم مصنوعات پرسیلز ٹیکس میں اضافہ کیخلاف درخواستوں پر فیصلہ محفوظ

لاہور(نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے پٹرولیم مصنوعات پر 17فیصد سے زائد سیلز ٹیکس وصول کرنے کے خلاف درخواستوں پر دلائل مکمل ہونے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا۔جسٹس عائشہ اے ملک نے اظہر صدیق ایڈووکیٹ سمیت دیگر کی درخواستوں پر سماعت کی، درخواست گزاروں کی طرف سے موقف اختیار کیا گیا کہ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتوں میں کمی واقعی ہوئی ہے لیکن وفاقی حکومت نے قیمتوں میں کمی کرنے کی بجائے سیلز ٹیکس میں غیرقانونی اضافہ کر دیا ہے، انہوں نے مؤقف اختیار کیا کہ پارلیمنٹ نے صرف 17فیصد سیلز ٹیکس کی منظوری دی ہے لیکن وفاقی حکومت 50فیصد سے زائد سیلز ٹیکس وصول کر رہی ہے جو غیرقانونی ہے، پارلیمنٹ نے اضافی سیلز ٹیکس کی منظوری نہیں دی، وفاقی حکومت نوٹیفکیشن کے ذریعے اضافی سیلز ٹیکس وصول کر ہی ہے، وفاقی حکومت کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ وفاقی حکومت کو سیلز ٹیکس بڑھانے کا اختیار حاصل ہے، عدالت نے فریقین کے دلائل مکمل ہونے کے بعد اضافی سیلز ٹیکس وصولی کے خلاف درخواستوں پر فیصلہ محفوظ کر لیاہے۔

مزید : صفحہ آخر