مشرف بیان کی بجائے اپنے خلاف مقدمات کا سامنا کریں، چودھری منظور

مشرف بیان کی بجائے اپنے خلاف مقدمات کا سامنا کریں، چودھری منظور

لاہور (نمائندہ خصوصی ) پاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات چودھری منظور احمد نے پیپلز پارٹی کے صوبائی سیکرٹریٹ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ سابق صدر پرویز مشرف بتائیں کہ راولپنڈی کے بے نظیر بھٹو کے جلسہ کی سیکورٹی کس کے حکم پر ہٹائی گئی تھی دوسرا جائے وقوع کو کس کے حکم پر دھویا گیا تھا قاتل ہمیشہ ثبوت مٹانے کی کوشش کرتا ہے آخر کس کے کہنے پر کرائم سین کو دھویا گیا تھا تیسرا اور آخری سوال قتل کیس کی ایف آئی آر بلاول بھٹو اور آصف زرداری کی درخواست پر کیوں درج نہیں کی گئی۔انہوں نے کہا کہ اس کیس میں پولیس کو سزا دی گئی ہے پولیس والے کہتے ہیں اس کیس میں پولیس کے حوصلے پست ہوئے ہیں لیکن ہم کہتے ہیں کہ کیس میں اگر پولیس والے خود کو بے گنا سمجھتے ہیں تو بلاول بھٹو سے معافی مانگیں شائد وہ انہیں معاف کر دیں پولیس والے کم از کم یہ تو بتائیں کہ آخر پولیس نے کرائم سین کو کس کے کہنے پر دھویا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ہم مطالبہ کرتے ہیں مشرف کے خلاف سانحہ کراچی اور سندھ میں پیپلز پارٹی کے کارکنوں کے قتل کے مقدمات کی سماعت کی جائے اور سزا دی جائے پرویز مشرف بیان دینے کی بجائے ملک میںآکر اپنے خلاف مقدمات کا سامنا کریں پرویز مشرف نے اس لئے الزمات عائد کیے کیونکہ آصف علی زرداری نے اس کیس میں پرویز مشر ف کے خلاف عدالت میں اپیل کا فیصلہ کیا تھا محترمہ بے نظیر بھٹو نے کہا تھا کہ یہ ایک بھٹو کو مار کر دوسرے بھٹو کو ڈراتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ میر مرتضی بھٹو قتل کا کیس محترمہ بے نظیر بھٹو کی اس وقت کی حکومت کو ڈسٹرب کرنا تھا بعد میں نواز شریف کی حکومت بنی اس قتل کیس اور قاتل کے بارے میں نواز شریف سے پوچھا جائے۔

مزید : صفحہ آخر