”تمہیں شرم نہ آئی کہ مسلمان لڑکے کیساتھ۔۔۔“ اس لڑکی کو مسلمان لڑکے کیساتھ ایک ایسا کام کرتے ہوئے پکڑ لیا گیا کہ ہندو آگ بگولہ ہو گئے، خاتون رہنماءنے مار مار کر ادھ موا کر دیا، ایسا کیا کر رہی تھی؟ جواب آپ سوچ بھی نہیں سکتے

”تمہیں شرم نہ آئی کہ مسلمان لڑکے کیساتھ۔۔۔“ اس لڑکی کو مسلمان لڑکے کیساتھ ...
”تمہیں شرم نہ آئی کہ مسلمان لڑکے کیساتھ۔۔۔“ اس لڑکی کو مسلمان لڑکے کیساتھ ایک ایسا کام کرتے ہوئے پکڑ لیا گیا کہ ہندو آگ بگولہ ہو گئے، خاتون رہنماءنے مار مار کر ادھ موا کر دیا، ایسا کیا کر رہی تھی؟ جواب آپ سوچ بھی نہیں سکتے

  

نئی دہلی (ڈیلی پاکستان آن لائن) مسلمان لڑکے کے ہندو لڑکی کیساتھ بیٹھ کر چائے پینا بھی جرم بن گیا، بی جے پی ویمن ونگ ”مہیلا مورچہ“ کی رہنماءنے لڑکی پر تھپڑوں کی بارش کر دی جبکہ لڑکے کو گرفتار کروا دیا گیا۔ لڑکی پر تشدد کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے پر ناصرف بھارت میں بلکہ دنیا بھر میں خاتون رہنماءکو تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔ملتان سلطانز کالوگو اور عصر حاضرکا ٹیم کٹ متعارف ، وسیم اکرم ڈائریکٹر کرکٹ، سابق آسٹریلین کرکٹر ٹام موڈی ہیڈ کوچ منتخب

بھارتی میڈیا کے مطابق بھارت میں حکمران جماعت بی جے پی کے ویمن ونگ ”مہیلا مورچہ“ کی لیڈر سنگیتا ورشنے نے ہندو، مسلمان دوستی پر اعتراض کرتے ہوئے لڑکی کو تشدد کا نشانہ بنایا۔ ویڈیو میں خاتون کو یہ کہتے سنا جا سکتا ہے کہ ”تمہیں کوئی شرم نہیں ہے، تو زیادہ بڑی ہو گئی ہے؟ تمہیں اتنی سمجھ نہیں ہے کہ کون ہندو ہے اور کون مسلمان ہے۔“

معاملہ منظرعام پر آنے کے بعد سنگیتا ورشنے میڈیا سے گفتگو میں بھی اپنے موقف پر ڈٹی رہی اور کہا”اگر کسی مسلم لڑکے سے ہندو لڑکی کی دوستی ہو گی تو وہ میں برداشت نہیں کروں گی کیونکہ میں سب سے پہلے ہندو ہوں۔ “

یہ بھی پڑھیں۔۔۔شہباز شریف کی آج سالگرہ ،مریم نواز نے ایسا کام کردیا کہ اپنے چچا کو بے حد خوش کردیا

واقعے کی اطلاع مقامی پولیس کو ملی تو سنگیتا ورشنے کیخلاف تو کوئی مقدمہ درج نہیں کیا گیا ہے البتہ مسلمان لڑکے کو فحاشی و بداخلاقی ایکٹ کے تحت گرفتار کر لیا گیا اور بعد ازاں ضمانت پر رہا کیا گیا۔ اس معاملے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر شیئر ہوئی تو بھارت میں مسلمان اور ہندوﺅں، دونوں کی جانب سے ہی بی جے پی کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

۔۔۔ویڈیو دیکھیں۔۔۔

مزید : ڈیلی بائیٹس