”مجھے انگلینڈ کے دو کلبز نے پیشکش کی تھی لیکن میں نے انکار کر دیا “قومی ٹیم کے کھلاڑی جنید خان نے پیشکش کیوں قبول نہیں کی؟ خود ہی بتا دیا

”مجھے انگلینڈ کے دو کلبز نے پیشکش کی تھی لیکن میں نے انکار کر دیا “قومی ٹیم ...
”مجھے انگلینڈ کے دو کلبز نے پیشکش کی تھی لیکن میں نے انکار کر دیا “قومی ٹیم کے کھلاڑی جنید خان نے پیشکش کیوں قبول نہیں کی؟ خود ہی بتا دیا

  


کراچی(ویب ڈیسک) برطانوی شہریت کے حامل ٹیسٹ فاسٹ بولرجنید خان نے کہا ہے کہ پاکستان میں جوعزت ملتی ہے وہ انگلش کرکٹر بن کر نہیں مل سکتی، انگلینڈ ٹیم سے کھیلنے کی پیش کش قبول نہیں کروں گا۔قائد اعظم ٹرافی میں کے پی کے ٹیم میں شامل فاسٹ بولر نے یو بی ایل گراونڈ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میری کارکردگی سب کےسامنے ہے، ڈومیسٹک کرکٹ کھیل کرکے پاکستانی سکواڈ میں جگہ بنانے کی کوشش کروں گا،امید پر دنیا قائم ہے۔جنید خان نے کہاکہ امید یہی ہے کہ ڈومیسٹک سیزن اچھا گزرے گا،خیبر پختونخواہ کے علاقہ صوابی کے چھوٹے سے گاو¿ں سے آیا ہوں،برطانوی شہریت رکھنے کے باوجود میرے لیے پاکستان پہلے ہے،مجھے انگلینڈ میں دو کلبز کی جانب سے بطور لوکل پلئر کاو¿نٹی کرکٹ کھیلنے کے چارسال کے معاہدے کی پیشکش ہوئی تھی،معاہدہ کرلیتا تو پاکستان کا سیزن اوور سیز کھلاڑی بن کرکھیلنا پڑجاتا،کاونٹی کھیلنے کامطلب انگلینڈ ٹیم میں شمولیت کا راستہ بننا ہے،مجھے پاکستان ٹیم کیلئے کھیلنا ہے، انگلینڈ کیلئے نہیں۔

مزید : کھیل


loading...