ہائی رسک علاقوں میں حفاظتی اقدامات جاری،راجہ بشارت 

 ہائی رسک علاقوں میں حفاظتی اقدامات جاری،راجہ بشارت 

  

 لاہور(نمائندہ خصوصی)صوبائی وزیر قانون،پارلیمانی امور و سوشل ویلفیئر راجہ بشارت نے کہا ہے کہ موثر حکومتی اقدامات کی بدولت اس وقت پنجاب میں کورونا متاثرین اور اموات کی شرح ملک میں سب سے کم ہے حالانکہ ہمسایہ ممالک میں کورونا کیسز کی تعداد پھر بڑھ رہی ہے، وہ آج وزیر اعلیٰ ہاؤس میں کابینہ کمیٹی برائے انسداد کورونا کے اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔ صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد، صوبائی وزیر ہائر ایجوکیشن راجہ یاسر ہمایوں، صوبائی وزیر سکولز مراد راس، آئی جی پنجاب اور متعلقہ محکموں کے سیکرٹریز بھی اس موقع پر موجود تھے، راجہ بشارت نے کہا کہ 30 ستمبر سے صوبہ بھر میں سکول مکمل کھل جائیں گے لہذا حکومت کے مقررہ ایس او پیز پر زیادہ سختی سے عمل کرایا جائے، انہوں نے کہا کہ ہماری نظر اس بات پر بھی ہے کہ تمام سکول کھلنے کے بعد پہلا اور دوسرا ہفتہ زیادہ اہم ہو گا لہذا والدین سے اپیل ہے کہ وہ بچوں کو مکمل احتیاطی تدابیر کیساتھ سکول بھجوائیں نیز انہیں اس حوالے سے آگاہی بھی دیں،قبل ازیں سیکریٹری پرائمری ہیلتھ نے پنجاب میں کورونا کی موجودہ صورتحال پر بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ پنجاب کے تعلیمی اداروں میں اب تک 36 ہزار سے زائد ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے 54 مثبت آئے، انہوں نے کہا کہ ایک مثبت کیس آنے پر کلاس روم اور دو کیسز پر سکول 5 دن کیلئے بند کر دیا جاتا ہے۔ اب تک پنجاب میں 14 کلاس روم اور دو سکول بند کیے گئے ہیں جبکہ ایس او پیز کیخلاف ورزی پر 6 شادی ہال بھی بند کیے گئے اور52 کو جرمانے کیے گئے. انہوں نے کہا کہ حکومت ہائی رسک علاقوں میں سخت حفاظتی اقدامات جاری رکھے ہوئے ہے اور ہسپتالوں میں بھی اقدامات مکمل ہیں۔

راجہ بشارت 

مزید :

صفحہ آخر -