نواز شریف اپنے ساتھ ساتھ”انکا“ علاج بھی کر رہے ہیں،مسلم لیگ ن

       نواز شریف اپنے ساتھ ساتھ”انکا“ علاج بھی کر رہے ہیں،مسلم لیگ ن

  

 لاہور(نامہ نگار)لاہورہائی کورٹ میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما رانا ثناء اللہ نے میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے کہاہے کہ میاں نواز شریف کی طبیعت بالکل ٹھیک ہے، اپنے علاج کے ساتھ ساتھ ان کاعلاج بھی کررہے ہیں،انشاء اللہ دونوں علاج کامیاب ہوں گے،ابھی ایک انجکشن لگا تو ہلچل سب دیکھ رہے ہیں،انہوں نے مزید کہا کہ  اے پی سی میں کئے گئے فیصلوں کو عملی جامہ پہنانے کے لئے رہبر کمیٹی حکمت عملی بنائے گی،فائنل راؤنڈ کا آغاز جنوری میں ہوگا،نااہل ٹولے کو نکال باہر کرنے کے لئے شفاف الیکشن ضروری ہیں،نیب جب بھی طلب کرے گی، پیش ہوں گے،آرمی چیف سے میٹنگ کی خبر پنڈی کے شیطان نے میڈیا کو دی،اس کی وضاحت عسکری قیادت کی طرف سے آچکی ہے جو پارلیمانی لیڈرز ملے تھے انہوں نے کوئی گفتگو نہیں کی،ہمارے قائدین جو میٹنگ میں شریک تھے جب ہماری پارٹی کی میٹنگ ہوگی تو پوچھیں گے کیا بات ہوئی،ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ یہ بات درست ہے کہ سیاست میں فوج کا کردار نہیں ہونا چاہیے۔ مسلم لیگ (ن) کی رہنمامریم اورنگزیب نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاہے کہ ادویات، آٹا و چینی بحران والا ٹولہ ملک پر مسلط ہے،6 سال سے عمران خان  فارن فنڈنگ کیس میں مفرور ہیں اور جواب نہیں دے رہے،نیب نے 2 سال سے تماشہ رچایا ہوا ہے،نیب سلیکٹڈ وزیراعظم اور ٹولہ سیاسی مخالفین کے انتقام کے لئے استعمال ہو رہا ہے،میاں نواز شریف، میاں شہباز شریف اور مسلم لیگ ن کے علاوہ نیب کو کوئی اور کیس یا چہرہ نظر نہیں آتا،عمران خان کی 2 سال سے انتقام کی آگ ٹھنڈی نہیں ہو رہی،انہوں نے مزید کہا کہ ملک کو سی پیک دینے، ایٹمی طاقت بنانے، لوڈشیڈنگ ختم کرنے والے آج عدالتوں میں پیشیاں بھگت رہے ہیں،بی آر ٹی کے 126 ارب کے کھڈوں کا کوئی نام نہیں لے رہا،میاں شہباز شریف پر الزام لگانے والے کا نام بے نامی، پڑھا لکھا سچا پاکستانی ہے،بے شرمو سامنے آ کر بات کرو،اس طرح دھمکا کر آپ ہمارا کچھ نہیں بگاڑ سکتے،میاں شہباز شریف کے خلاف نیب بینامی شخص کی درخواست قبول کرتا ہے،میری نیب چیئرمین سے درخواست ہے کہ اصل درخواست گزار کو سامنے لائیں،سلیکٹڈ وزیراعظم کے حکم پر شہباز شریف کے خلاف درخواست دی گئی،یہ کیس نیب نے اپنی کسٹڈی میں شروع کیا،شہزاد اکبر اور ڈی جی نیب لاہور اس کیس کے حوالے سے پریس کانفرنس کرتے ہیں،اگر اے پی سی غیر اہم تھی تو حکومتی ترجمان کیوں حواس باختہ ہیں،اب ان کے گھر جانے کا وقت ہوا چاہتا ہے،انہوں نے مزید کہا کہ ملک کو ترقی دینے والوں کو ایسے خوار کیا جاتا ہے لیکن اب اس نظام کو بدلا جانا چاہیے،سیایس انتقام، میڈیا سنسرشپ کو ختم ہونا چاہیے،فوج کی جانب سے بیان اس سلیکٹڈ حکومت کے خلاف ہے کیونکہ یہ تاثر ان نالائقوں نے دیا ہے،تمام اداروں کو اپنی اپنی حدود میں رہ کر کام کرنا چاہیے،چیئرمین نیب کی حالت ایس ایچ او کی سی ہو گئی ہے کہ کسی کے حکم پر گرفتار کر لیا جاتا ہے،سی سی پی او کو پیغام ہے کہ اپنے اندر دم پیدا کرو اور بتاو کہ انہیں لاہور میں لگایا کیوں گیا،ایک سوال کے جواب میں انہوں ں ے کہا کہ میاں نواز شریف صحت یاب ہو کر ڈاکٹروں کی اجازت سے پی واپس آئیں گے،ڈاکٹر یاسمین راشد روزانہ اس حکومت کے منہ پر طمانچے مارتی ہیں کہ نواز شریف کی رپورٹس درست تھیں۔

مسلم لیگ ن

مزید :

صفحہ اول -