آفتاب شیرپاؤ کو کچھ ہوا تو ذمہ دار ی حکومت پر ہو گی‘ فائزہ رشید

  آفتاب شیرپاؤ کو کچھ ہوا تو ذمہ دار ی حکومت پر ہو گی‘ فائزہ رشید

  

پشاور (سٹی رپورٹر)قومی وطن پارٹی کے سینئر وائس چیرمین طارق خان اور صوبائی وائس چیرپرسن ڈاکٹر فائزہ رشید نے خبردار کیا ہے کہ اگر ملی رہبر آفتاب احمد خان شیرپاو کو کسی قسم کا کوئی نقصان پہنچایا گیا تو ذمہ داری حکومت اور متعلقہ سکیوریٹی اداروں پر عائد ہوگی،پشاور پریس کلب میں پارٹی کے دیگر رہنماوں کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا سنٹرل پولیس آفس سے ریجنل پولیس افسران کے نام جاری شدہ خط میں کہا گیا ہے کہ دہشت گردوں  نے افغانستان کے صوبے کنٹر میں اپنے بیٹھک میں سیاسی شخصیات پر حملوں کی منصوبہ بندی کی، جو افراد دہشت گردوں کے نشانے پر ہیں ان میں ملی رہبر آفتاب احمد خان شیرپاو کا نام بھی شامل ہیں۔قومی وطن پارٹی کے رہنماوں  نے کہاسکیوریٹی ادارے ماضی میں بھی اکثر اوقات ملی رہبر کے سلامتی کو درپیش خطرات کی نشاندہی کرتے رہے ہیں لیکن قومی وطن پارٹی نے ہمیشہ اس قسم کی اطلاعات کے باوجود اپنی تنظیمی سرگرمیاں کبھی بھی بند  نہیں کئے تاہم پہلی دفعہ سکیوریٹی اداروں نے  اس سلسلے میں اطلاعات عام کی  ہیں۔کیو ڈبلیو پی کے رہنما  طارق خان نے کہا کہ سلامتی کے ذمہ دار اداروں سے ہمارا سوال ہے کہ اگر اداروں کے پاس یہ تمام معلومات موجود ہیں تو وہ دہشت گردوں کو گرفتار کیوں نہیں کرتے؟انہوں نے دوٹوک انداز میں اعلان کیا کہ قومی وطن پارٹی  یا ملی رہبر اس قسم کے ہتھکنڈوں سے کبھی مرعوب نہیں ہونگے۔انہوں نے مزید کہا خطرات کی نشاندہی کے باوجود ملی رہبر کے سلامتی کو یقینی بنانے کے لئے متعلقہ اداروں کی جانب سے کوئی اقدامات نہیں کئے جارہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -