پختونخوا ادبی ثقافتی تڑون کا موٹروے واقعہ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

پختونخوا ادبی ثقافتی تڑون کا موٹروے واقعہ کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

  

پشاور (سٹی رپورٹر) پختونخوا دبی ثقافتی تڑون کے زیر اہتمام لاہور موٹر وے سانحہ کے خلاف پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا اور حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ متاثرہ خاتون کو جلد از جلد انصاف فراہم کیا جائے جبکہ واقعہ پر سی سی پی او عمر شیخ اور گجر پورہ تھانہ کے ایس ایچ او کے نازیبہ الفاظ پر معافی مانگے اور انکے خلاف کاروائی کی جائے مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈدز اور بینرز اٹھا رکھے تھے جس پر لاہور میں ہونوالے واقع کے خلاف نعرے درج تھے مظاہرے کی قیادت حاجی عبدالرحمن نساپا،شوکت علی،محمد اسلم نزر باغی اور دیگر ساتھیوں نے کی اس موقع پر مظاہرین کا کہنا تھا کہ موٹر واے پر سانحہ سے چابت ہوا کے موٹر وے پولیس نا کام ہو چکی ہے اور ایک خاتون چچھوتے بچوں کے سامنے بے دردی سے جنسی درندگی کا نشانہ بنایا انہوں نے کہا کہ اگر حالات اسی طرح چلتے رہے تو یہاں جنگل کا قانون ہوگا اور کسی کی عزتیں محفوظ نہیں  ہونگی انہوں نے چیف آف آرمی سٹاف سے مطالبہ کیا ہے کہ لاہور موٹر وے واقع میں ملوث افراد کو  عبرت ناک سزا دی جائے جبکہ اس کیس میں تفتیش ایجنسیز کے حوالے کی جائے کیونکہ پولیس جانبدار ی کا مظاہرہ کر ری ہے اور جنسی حراسگی کے وقعات کو روکنے کے ٹھوس قانون سازی کی جائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -