سنتھیا ڈی رچی کو ملک بدر کرنے سے روکنے کے حکم میں تیرہ اکتوبر تک توسیع  

     سنتھیا ڈی رچی کو ملک بدر کرنے سے روکنے کے حکم میں تیرہ اکتوبر تک توسیع  

  

اسلام آباد(آئی این پی) اسلام آباد ہائی کورٹ نے امریکی خاتون (بقیہ نمبر56صفحہ 7پر)

سنتھیا ڈی رچی کو ملک بدر کرنے سے روکنے کے حکم میں تیرہ اکتوبر تک توسیع کردی ہے۔ تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے سنتھیا رچی کی ملک بدری سے روکنے کے لئے دائر درخواست پر سماعت کی۔ سماعت کے آغاز پر سنتھیا رچی کے وکیل عدالت کو آگاہ کیا کہ ماتحت عدالت میں دو سماعتیں ہوچکیں، رحمان ملک کی جانب سے کوئی پیش نہیں ہوا ہے،اس موقع پر ڈپٹی اٹارنی جنرل نے کہا کہ ویزہ میں توسیع سے متعلق سیکرٹری داخلہ کے پاس سنتھیا کی اپیل زیر سماعت ہے، اس درخواست کو بھی نمٹا دیا جائے۔ دوران سماعت بزنس ویزے سے متعلق عدالت کے استفسار پر وزارت داخلہ کے نمائندے نے بتایا کہ سنتھیا نے بزنس ویزہ کے لیے ضروری چیمبر آف کامرس شگاگو کا لیٹر فراہم کیا ہے، پاکستان میں جس کمپنی نے اسپانسر کیا اس کا خط بھی دیا گیاہے،بزنس ویزہ کے حوالے سے یہ پہلا کیس ہے جس میں سیاسی بیان بازی کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ جس پر جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ اس کیس کی تحقیقات وزارت داخلہ کا کام ہے ابھی تک وزارت داخلہ نے اس نوعیت کے کتنے ویزہ کینسل کیے ہیں،بعد ازاں عدالت نے سنتھیا رچی کو گزشتہ حکم نامے کے تحت بیان حلفی جمع کرانے کا ہدایت کرتے ہوئے سماعت تیرہ اکتوبر تک ملتوی کردی،جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ سنتھیا نے سنگین نوعیت کے الزامات لگائے ہیں، کیا حکومت نہیں چاہتی کہ اس معاملے کی تحقیقات کی جائیں۔

 سنتھیا ڈی رچی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -