ملتان ڈویژن: ٹیکس ریکوری کیلئے عملی اقدامات شروع‘ مراسلہ روانہ 

ملتان ڈویژن: ٹیکس ریکوری کیلئے عملی اقدامات شروع‘ مراسلہ روانہ 

  

ملتان (سٹی  رپورٹر)وزیراعظم پاکستان کے وژن کے تحت ملتا ن ڈویثرن میں ٹیکس ریکوری نظام نافذ کرنے کیلئے عملی اقدامات کا آغاز کردیا گیا۔ کمشنر ملتان ڈویثرن و ایڈمنسٹریٹر میٹروپولیٹن کارپوریشن جاوید اختر محمد نے میٹروپولیٹن کارپوریشن کی پروفیشنل فیس ریکوری ہدف سے انتہائی کم ہونے پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے عرصہ دراز سے برائے (بقیہ نمبر32صفحہ 10پر)

نام اکھٹی ہونیوالی پروفیشنل فیس کے اعدادوشمار مسترد کردیئے۔ انہوں نے کہا کہ بگ سٹی ہونے کے باوجود برائے نام ریکوری بدعنوانی کا واضح ثبوت ہے۔ریکوری انسپکٹرز قبلہ درست کرکے ازسرِنو ٹیکس زونز کی سروے رپورٹ پیش کریں۔ پروفیشنل فیس ریکوری بہتر کرنے کیلئے کمشنر ملتان کی جانب سے باقاعدہ مراسلہ بھی جاری کردیا گیا جس کے مطابق پروفیشنل فیس ریکوری سروے کیلئے ملتان کو 8 زونز میں تقسیم کر کے 8 انسپکٹرز اور کلرکوں کو ریکوری اور سروے ٹاسک سونپ دیا گیا ہے۔تمام انسپکٹرز 29 ستمبر دوپہر 2 بجے تک سروے رپورٹ جمع کروانے کے پابند ہوں گے اور ریکوری کم ہونے کی صورت میں متعلقہ انسپکٹر یا کلرک کے خلاف پیڈا ایکٹ کے تحت کارروائی کی جائے گی۔مراسلہ کے مطابق تمام ریکوری سٹاف روزانہ شام 6 بجے تک میونسپل افسر فنانس کو رپورٹ کرنے کا پابند ہوگا جبکہ ہر ہفتے دوپہر دو بجے تک ایڈیشنل کمشنر کوآرڈینیشن کو ریکوری رپورٹ جمع کروانا لازم ہوگا۔ واضح رہے کہ میٹروپولیٹن کارپوریشن پروفیشنل فیس 96 آئٹمز سے جمع کرتی ہے۔جبکہ گزشتہ کئی سال سے کارپوریشن میں ریکوری فیس کے حوالے سے کوئی سروے نہیں ہو سکا ہے اور گزشتہ ایک سال میں صرف 10 ملین ریکوری ہوپائی ہے۔پروفیشنل فیس سروے کے بعد ریکوری بہتر بنا کر میٹروپولیٹن کارپوریشن کو مستحکم کیا جاسکے گا۔

برہم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -