جھوٹی مخبری: سمہ سٹہ پولیس کا کسان کے گھر دھاوا‘ وحشیانہ تشدد 

  جھوٹی مخبری: سمہ سٹہ پولیس کا کسان کے گھر دھاوا‘ وحشیانہ تشدد 

  

 بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر) مخالف کی جھوٹی مخبری پرتھانہ سمہ سٹہ پولیس نے دھاوا بول کر غریب کاشتکار کوگرفتار کرکے بے پناہ تشدد کا نشانہ بنایا‘ سابق ایس ایچ اوعمران بھٹی سب انسپکٹر معراج نے عابدلاڑکو راستے میں جاتے ہوئے گرفتار کیاایک کروڑ روپے نقدی100 (بقیہ نمبر36صفحہ 10پر)

تولے سونا ڈکیتی کرنے کاالزام لگاکر8 دن تک بے پناہ تشدد کرتے رہے ساڑھے پانچ لاکھ کاٹریکٹر موٹرسائیکل اوردیگرسامان ہضم کرکے چھوڑ دیا تفصیل کے مطابق مبینہ طورپرموضع آغاپورکے رہائشی عابد حسین لاڑکے مبینہ مخالف اورپولیس ٹاؤٹ نے سمہ سٹہ پولیس کومخالفت کی بناپر جھوٹی اطلاع دی کہ عابد حسین محمداکبرفضل حسین اوردیگرکے پاس ڈکیتی کی ایک کروڑ روپے رقم اور100 تولے سوناہے تھانہ سمہ سٹہ کے سابق ایس ایچ اوعمران بھٹی سب انسپکٹرمعراج نے بغیرتصدیق کیئے پولیس کی بھاری نفری کے ہمراہ عابد حسین کوشہرسے گھرجاتے ہوئے راستے میں گرفتار کرلیااورپھراس کے گھرپردھاوابول کرخواتین پربے پناہ تشدد کیاگھرسے ایک فیٹ ٹریکٹر نمبرBRS-14/1376، روہی موٹرسائیکلBRL-18-2139 ایک30 ہزار روپے مالیت کابکرادس ہزار روپے کی سپرے اوردیگرقیمتی سامان اٹھاکرلے گئے اورعابدحسین پرتشدد کرکے ٹریکٹر کے کاغذات بھی منگوالیے اورپھرمقامی زمیندارکواس کاٹریکٹر5 لاکھ 30 ہزار میں فروخت کرکے رقم اپنے پاس رکھ لی متاثرہ شخص عابدحسین لاڑنے دیگر افراد کے ہمراہ احتجاج کرتے ہوئے بتایاکہ سب انسپکٹرمعراج نے اسے پولیس مقابلے میں مارنے اورڈکیتی کی خطرناک وارداتوں میں چالان کرنے کی دھمکی بھی دی اس طرح ٹریکٹر کی قیمت اوردیگرسامان بھی ہضم کرنے کے پانچ روز بعدجب اس کی طبعیت بہترہوئی تواسے چھوڑ دیااس کے بعدتھانہ کوتوالی کی پولیس سے ساز بازکرکے عبدالمجید امتیاز نامی شخص کومدعی بناکراس کے بھائی محمداکبراوراس سمیت کئی افراد کیخلاف چوری کامقدہ درج کرادیاگیااوراس کابھائی محمداکبر20 روزتک جیل بھی کاٹ چکاہے۔ اوراب بھی کاروائی سے بازنہ آنے پر سب انسپکٹرمعراج اسے جعلی پولیس مقابلے میں مارنے کی دھمکیاں دے رہاہے۔ اس سلسلہ میں جب سب انسپکٹر معراج سے رابطہ کیاگیاتواس نے کہاکہ میں نے جوریکوری کی تھی وہ پولیس کوجمع کرادی ہے۔ میرے پاس ملزمان کی ایک پائی بھی نہیں ہے۔ متاثرین نے بتایاکہ وہ ڈی پی اوبہاولپور،ڈی ایس پی صدراوردیگر پولیس افسران کودرخواستیں دے چکے ہیں اس کی کوئی شنوائی نہ ہورہی ہے متاثرین نے وزیراعظم پاکستان وزیراعلی پنجاب، آئی جی پنجاب اوردیگرارباب اختیار سے فوری نوٹس لے کرمذکورہ بالاافسران کیخلاف کاروائی اوراس کالوٹاہواسامان برآمد کرانے کامطالبہ کیاہے۔

تشدد

مزید :

ملتان صفحہ آخر -