سانحہ بلدیہ فیکٹری میں سہولت کار، منصوبہ ساز اور حکم دینے والے بچ گئے،علی زیدی 

 سانحہ بلدیہ فیکٹری میں سہولت کار، منصوبہ ساز اور حکم دینے والے بچ گئے،علی ...

  

 کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)وفاقی وزیر بحری امور علی زیدی نے سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس کے فیصلے پر اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ فیصلے سے ثابت ہوتا ہے آگ لگناحادثہ نہیں دہشت گردی اور مجرمانہ کارروائی تھی۔ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں علی زیدی کا کہنا تھا کہ سانحہ بلدیہ فیکٹری    کیس پر عدالتی فیصلے سے لواحقین کا کچھ مداوا ہوا ہوگا جنہوں نے 8 سال تک انصاف کا انتظار کیا۔علی زیدی کا کہنا ہے کہ فیصلے نے ثابت کردیا ہے کہ سندھ پولیس کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) کی رپورٹس میں گڑبڑ کی گئی، اس فیصلے نے سندھ پولیس کی کارکردگی پربھی سوالات اٹھادیے ہیں۔وفاقی وزیر کا مزید کہنا ہے کہ اس فیصلے کا سب سے افسوس ناک پہلو یہ ہے کہ حسب معمول سہولت کار، منصوبہ ساز اور حکم دینے والے بچ گئے جب کہ نیچے کے لوگ جنہوں نے ان کے حکم پر یہ سب کیا انہیں سزا مل گئی ہے۔واضح رہیکہ کراچی کی انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے 8 سال بعد سانحہ بلدیہ فیکٹری کافیصلہ سنادیا ہے۔

 علی زیدی 

مزید :

صفحہ اول -