سعودی عرب نے اتوار 4 اکتوبر سے عمرہ اور زیارت کی اجازت دینے کا اعلان کر دیا‎، بڑی خوشخبری

سعودی عرب نے اتوار 4 اکتوبر سے عمرہ اور زیارت کی اجازت دینے کا اعلان کر دیا‎، ...
سعودی عرب نے اتوار 4 اکتوبر سے عمرہ اور زیارت کی اجازت دینے کا اعلان کر دیا‎، بڑی خوشخبری
کیپشن:    سورس:   creative commons license

  

ریاض (وقار نسیم وامق) سعودی وزارت حج و عمرہ کی جانب سے عمرہ کی ادائیگی کے پہلے مرحلے کے آغاز کا اعلان کیا گیا ہے جس میں چار اکتوبر سے سعودی شہری اور مملکت میں مقیم غیر ملکی عمرہ ادا کرسکیں گے جبکہ یکم نومبر سے دیگر ممالک کے افراد کو عمرہ کرنے کی اجازت دی جائے گی. 

 سعودی عرب نے اتوار 4 اکتوبر  سے عمرہ اور زیارت کی اجازت دینے کا اعلان کیا ہے جس کے مطابق اندرون مملکت سے سعودی شہریوں اور مقیم غیرملکیوں کو عمرہ اور زیارت کی اجازت ہوگی۔ عمرہ مرحلہ وار بحال کیا جائے گا۔ 

سعودی  وزارت داخلہ کے عہدیدار نے منگل کو بیان میں کہا کہ دنیا بھر کے مسلمانوں کی جانب سے عمرہ و زیارت کی ادائیگی کی اجازت کی آرزو اور نئے کورونا وائرس کی تازہ صورتحال کے پیش نظر سعودی قیادت نے عمرہ اور زیارت کی مرحلہ وار تدریجی اجازت دی ہے جس کے تحت ضروری حفاظتی پابندی کے ساتھ عمرہ اور زیارت کی جاسکے گی، اجازت مرحلہ وار ہوگی۔ عمرے کی ادائیگی اور مسجد الحرام کی زیارت، مسجد نبویؐ میں روضہ مبارکہ کی زیارت تین مرحلوں میں تدریجی طور پر دی جائے گی۔

  پہلا مرحلہ اتوار 4 اکتوبر 17 صفر 1442ھ  سے شروع ہوگا۔ اس مرحلے میں اندرون ملک سے سعودی شہریوں اور مقیم غیرملکیوں کو عمرے کی اجازت ہوگی۔ روزانہ چھ ہزار عمرہ زائرین کو مسجد الحرام  جانے کا موقع دیا جائے گا۔ اس موقع پر حفظان صحت کی جملہ تدابیر کی پابندی کرائی جائے گی۔   

دوسرے مرحلے کی شروعات  18 اکتوبر 2020  سے ہوگی۔ اس کے تحت سعودی شہریوں اور مقیم غیرملکیوں کو عمرہ، زیارت اور نمازوں کی اجازت ہوگی۔ روزانہ 15 ہزار عمرہ زائر اور چالیس ہزار افراد مسجد الحرام میں نماز ادا کرسکیں گے۔ اس موقع پر حرم شریف میں حفاظتی تدابیر کا اہتمام ہوگا۔علاوہ ازیں مسجد نبویؐ کی گنجائش کے 75 فیصد تک نمازیوں کو جانے کی اجازت ہوگی۔ 

تیسرے مرحلے کی شروعات یکم نومبر 2020 15 ربیع الاول سے شروع ہوگی۔ اس دوران سعودی شہریوں اور مملکت کے اندر اور باہر سے غیرملکیوں کو عمرہ، زیارت اور نمازوں کی اجازت دی جائے گی. 

مزید :

عرب دنیا -