وہ6 پاکستانی بینک جن کے ذریعے کی جانے والی منی لانڈرنگ کی تفصیلات سب کے سامنے آگئیں

وہ6 پاکستانی بینک جن کے ذریعے کی جانے والی منی لانڈرنگ کی تفصیلات سب کے سامنے ...
وہ6 پاکستانی بینک جن کے ذریعے کی جانے والی منی لانڈرنگ کی تفصیلات سب کے سامنے آگئیں

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) گزشتہ دنوں امریکہ حکومت کی کچھ خفیہ دستاویزات لیک ہو کر منظرعام پر آ گئی تھیں جن سے تہلکہ خیز انکشاف ہوا تھا کہ کئی بڑے اور بین الاقوامی بینک منی لانڈرنگ اور مجرمانہ سرگرمیوں سے حاصل ہونے والی رقوم کی ترسیل میں معاونت کرتے رہے ہیں۔ اس فہرست پر انٹرنیشنل کنسورشیم آف انویسٹی گیٹو جرنلسٹس (آئی سی آئی جے)نامی صحافیوں کا بین الاقوامی گروپ تحقیقات کر رہا تھا۔اس گروپ میں 88ممالک کے 108میڈیا ہاﺅسز کی نمائندگی ہے۔گروپ کی تحقیقات میں اب 6پاکستانی بینکوں کے نام بھی سامنے آ گئے ہیں جو منی لانڈرنگ میں لوگوں کی مدد کرتے رہے۔ 

مبینہ طور پر ان پاکستانی بینکوں میں مبینہ طور پرالائیڈ بینک لمیٹڈ، یونائیٹڈ بینک لمیٹڈ، حبیب میٹرو، بینک الفلاح، سٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک اورحبیب بینک لمیٹڈ شامل ہیں۔ ویب سائٹ ’پرو پاکستانی‘ نے اپنی ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ ان 6بینکوں کے ذریعے 20لاکھ ڈالر (تقریباً 33کروڑ 25لاکھ روپے) کی منی لانڈرنگ کی گئی۔ یہ منی لانڈرنگ 29مختلف ٹرانزیکشنز کے ذریعے کی گئی جو پاکستان میں یا پاکستان سے باہر کی گئیں۔ ان میں سے ایک ٹرانزیکشن 4لاکھ 52ہزار ڈالر کی تھی۔ رپورٹ کے مطابق وکی لیکس کے بعد یہ دوسرا بڑا بین الاقوامی سطح کا سکینڈل بن کر سامنے آ رہا ہے جس میں ان 6پاکستانی بینکوں کے ساتھ ساتھ الطاف خانانی کی کمپنی کا بھی نام آ رہا ہے۔ اب تک دنیا بھر کے جتنے بینکوں کے نام اس سکینڈل میں سامنے آ چکے ہیں ان کے ذریعے مجموعی طور پر 20کھرب ڈالر سے زائد کی منی لانڈرنگ کی گئی۔ 

مزید :

بین الاقوامی -