معروف کاروباری شخص نے گھر سے کام کرنے والے ملازمین کے بارے میں ایسا بیان دے دیا کہ ہنگامہ برپا ہوگیا

معروف کاروباری شخص نے گھر سے کام کرنے والے ملازمین کے بارے میں ایسا بیان دے ...
معروف کاروباری شخص نے گھر سے کام کرنے والے ملازمین کے بارے میں ایسا بیان دے دیا کہ ہنگامہ برپا ہوگیا
سورس: Pxfuel (creative commons license)

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس کی وباءکے دوران گھر سے کام کرنے کا ایک نیا رجحان متعارف ہوا ہے۔ لاک ڈاﺅن کے دوران بیشتر دفاتر کے ورکرز گھر بیٹھ کر کام کرتے رہے اور بعض جگہوں پر اب بھی یہی سلسلہ چل رہا ہے تاہم اب ایک کاروباری شخص نے گھر سے کام کرنے والے ورکرز کے بارے میں ایسے نازیبا الفاظ بول دیئے ہیں کہ انٹرنیٹ پرہنگامہ برپا ہو گیا۔ ڈیلی سٹار کے مطابق لندن ریکروٹر جیمز کوکس نے لنکڈ ان پر ایک پوسٹ میں گھر سے کام کرنے والے ورکرز کو سست الوجود قرار دیتے ہوئے الزام عائد کیا ہے کہ یہ لوگ گھر بیٹھ کر ٹی وی دیکھنے کے لیے گھر پر کام کرنے کا بہانہ کرتے ہیں۔

جیمز کوکس نے اس پوسٹ میں لکھا ہے کہ ”کیا آپ اس لیے گھر سے کام کررہے ہیں کہ آپ کو صبح 6بجے اٹھ کر تیار نہیں ہونا پڑتا؟ سفر پر اٹھنے والا خرچ بچ جاتا ہے؟ اور پھر آپ دن کے وقت گھر بیٹھے ٹی وی شو ’لوز وومن‘ بھی دیکھ سکتے ہیں؟ گھر پر کام کرنا ترک کیجیے، یہ احمقانہ بات ہے۔ آئیے برطانیہ کو دوبارہ واپس کام پر لاتے ہیں۔“کمنٹس میں لوگ جیمز کو اس بات پر کڑی تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں۔ سٹورٹ ہاپکنز نامی ایک صارف نے لکھا ہے کہ ”بدقسمتی سے آپ جیسے لوگ سمجھتے ہیں کہ جو لوگ گھر بیٹھے کام کرتے ہیں وہ سست الوجود ہوتے ہیں۔ ہم میں سے کچھ لوگ بلاوجہ ٹرین پر 3گھنٹے ضائع نہیں کرنا چاہتے اور 50پاﺅنڈ روزانہ سفر پر خرچ نہیں کرنا چاہتے۔ آپ جیسے لوگ ماضی میں پھنسے ہوئے ہیں۔ بیشتر بڑی کمپنیاں اب لوگوں کو مستقل طور پر گھر سے کام کرنے کی اجازت دے رہی ہیں کیونکہ ثابت ہو چکا ہے کہ گھر بیٹھ کر کام کرنے والے ورکرز زیادہ بہتر کام کرتے ہیں۔ “

مزید :

بین الاقوامی -