ایل ڈبلیو ایم سی میں اصلاحات کا سلسلہ جاری ہے،عاطف چوہدری

ایل ڈبلیو ایم سی میں اصلاحات کا سلسلہ جاری ہے،عاطف چوہدری

  

لاہور(نمائندہ خصوصی) لاہور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کو مستحکم اور مربوط بنیادوں پر استوار کرنے کے لیے مسلسل اصلاحات کا سلسلہ جاری ہے۔ترجمان ایل ڈبلیو ایم سی کے مطابق چیئرمین ایل ڈبلیو ایم سی عاطف چوہدری کی زیر صدارت بورڈ آف ڈائریکٹرز کا 130واں اجلاس مرکزی دفتر میں ہوا،جس میں سی ای او ایل ڈبلیو ایم سی رافعہ حیدر، ڈپٹی سی ای اوز منیر حسین، فہد محمود،بورڈ ممبران اور دیگر افسران نے شرکت کی۔اجلاس کے دوران اہم امور پر  فیصلے کرتے ہوئے ٹاؤن مینجرز، زونل افسران، سپروائزرز و دیگر آپریشنل سٹاف کی ٹرانسفرز پر تا حکم ثانی پابندی کا فیصلہ کیا گیا۔ٹرانسفر پوسٹنگ پر پابندی کا فیصلہ آپریشنل سٹاف کی کارکردگی کو بہتر بنانے کیلئے کیا گیا ہے۔بورڈ آف ڈائریکٹرز کی جانب سے ورکرز کی ویلفئیر کے لیے اہم اقدامات اٹھانے پر بحث کی گئی۔

 اور ایل ڈبلیو ایم سی ورکرز کی تدفین کیلئے دی جانے والی رقم میں بھی اضافہ کر کے 25,000 سے بڑھا کر 50,000 کرنے کا فیصلہ کر لیا۔

  گیا۔ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے چیئرمین ایل ڈبلیو ایم سی عاطف چوہدری کا کہنا تھا کہ لاہور ویسٹ مینجمنٹ کمپنی اپنی اعلیٰ کارکردگی کی وجہ سے مانیٹرنگ سے آپریشنل ذمہ داریاں احسن طریقے سے نبھا رہی ہے۔

 اب ادارے کو آپریشنل بنانے کے بعد اگلا قدم اتھارٹی بنانے کا ہے۔بورڈ کا متفقہ فیصلہ ہے کہ ایل ڈبلیو ایم سی کو کمپنی سے اتھارٹی بنایا جائے۔ ڈور ٹو ڈور ویسٹ کولیکشن، سڑکوں پر کوڑے کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے ویسٹ اتھارٹی بہتر طریقے سے کام کر سکے گی۔مزید براں ایل ڈبلیو ایم سی کمپوسٹ پلانٹ پر تیار ہونے والی ماحول دوست کمپوسٹ ''بیلیا'' کی قیمتوں میں تبدیلی کا فیصلہ بھی متفقہ رائے سے کر لیا گیا۔5 کلو کمپوسٹ کا تھیلا 45 روپے سے بڑھا کر 80 روپے،20 کلو کمپوسٹ کا تھیلا 160 روپے سے بڑھا کر 280 روپے50 کلو کمپوسٹ کا تھیلا 700 روپے میں فروخت کیا جائے گا۔کمپوسٹ کی قیمتیں بڑھانے سے کمپنی کے ریونیو میں اضافہ ہو گا جبکہ۔ چیئرمین  ایل ڈبلیو ایم سی عاطف چوہدری کا مزید کہنا تھا کہ ادارہ شہر میں صفائی کے موثر نظام کو یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ ادارے میں عملی اصلاحات کے لیے جامع حکمتِ عملی نافذ کرنے کے لیے بھی پُرعزم ہے شہر لاہور کو جدید ترین سہولیات سے مستفید کرنے کے لیے ادارے کو اتھارٹی بنانا وقت کی اہم ضرورت ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -