ذخیرہ اندوزوں کو کسی صورت معاف نہیں کیا جائے گا، بلال یاسین

ذخیرہ اندوزوں کو کسی صورت معاف نہیں کیا جائے گا، بلال یاسین

  

لاہور(کامرس رپورٹر)صوبائی وزیر خوراک و چیئرمین کابینہ پرائس کنٹرول کمیٹی پنجاب بلال یاسین نے کہا ہے کہ آلو کی قیمت خرید کو 30روپے فی کلو تک لانے کا عہد کیاہے اس ضمن میں ذخیرہ اندوزوں کو کسی صورت معاف نہیں کیا جائے گا۔یہ بات انہوں نے گزشتہ روز ملتان روڈ سبزی منڈی کے اچانک دورہ کے دوران کہی۔ سبزی منڈی میں موجود صارفین نے صوبائی وزیر سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ منڈی میں اشیاءضروریہ وافر مقدار اور سستے داموں میںدستیاب تو ہیں۔ مگر یہاں عرصہ ہاسے صفائی ستھرائی کا نظام نہیں ہے۔ آڑھتیوں نے بتایا کہ سبزی منڈی میں زرعی اجناس کی آڑھتیں 20فیصد ہےں جبکہ70فیصد آڑھتوں پر غیر زرعی حضرات نے قبضہ کیا ہوا ہے صوبائی وزیر نے آڑھتیوں کو یقین دلایا کہ اس منڈی کو مثالی منڈی بنایا جائے گا اور اس میں صفائی ستھرائی اور غیر زرعی آڑھتیوںکو ختم کیا جائے گا۔ اس موقع پر صوبائی وزیر نے صحافیوںکے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے کہا کہ وزیراعلیٰ کی ہدایت پر اشیاءضروریہ کی قیمتوں کو معمول پر لانے اور ذخیرہ اندوزوں کا شکنجہ کسنے کے لیے ضلعی انتظامیہ کو ہدایات کردی گئی ہیں۔

 اور انشاءاﷲ آلوو دیگر سبزیوں کی قیمتوں کو نیچے لایا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ اگر آلو چند روز میں 30روپے فی کلو تک مارکیٹ میں فروخت نہ ہوا۔ تو آلو پر عائد 25 فیصد ریگولیٹری ڈیوٹی ختم کر کے آلو ایمپورٹ کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ حکومت آلو کی ایکسپورٹ روکنے کے لیے بھی اقدامات کررہی ہے ۔ صوبائی وزیر نے بتایا کہ آلو ذخیرہ کرنے والے آڑھتیوں یا کسانوں کی جانب سے مصنوعی قلت کے ذریعے بحران پیدا کیا جارہاہے۔ حکومت ایسے ہتھکنڈوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹناجانتی ہے اور آلو کی مصنوعی قلت پیدا کرنےوالوں کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا۔صوبائی وزیر بلال یاسین نے ملتان روڈ سبزی منڈی کے آڑھتیوں کو یقین دلایا کہ منڈی کو مثالی بنایا جائے گاتاکہ اس کے گرد نواں میں بسنے والے صارفین کو مقررہ نرخوں پر اشیاءضروریہ کے علاوہ منڈی کا صاف ستھرا ماحول بھی میسر ہو۔ انہوں نے بتایا کہ سبزی منڈی کو اپ گریڈ کر کے مثالی منڈی بنایا جائے گا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -