بلڈنگ ریگولیشنز 2008ء میں ترامیم کیلئے 59نکاتی ایجنڈا پرعمل درآمد کی منظوری

بلڈنگ ریگولیشنز 2008ء میں ترامیم کیلئے 59نکاتی ایجنڈا پرعمل درآمد کی منظوری

  

 لاہور(اپنے نمائندے سے)لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے لاہور ڈویژن میں بلڈنگ ریگولیشنز2008میں ترامیم کے لیے59نکاتی ایجنڈا پر عمل درآمد کر دیا گیا جس کی گزشتہ روز باقاعدہ اتھارٹی نے اجازت بھی دے دی ہے روزنامہ پاکستان کوملنے والی معلومات کے مطابق ایل ڈی اے نے2008کے لیے59نکاتی ایجنڈا پیش کیا تھا اور اس حوالے سے عوام الناس کو رائے دینے کے لے کہا گیا تھا ایجنڈے میں 59نکات میں ترامیم کے مطابق بلڈنگز کی اونچائی،ہر فلور کی اونچائی،بلڈنگ میں فائر الارم سسٹم، ڈرین سسٹم،پارکنگ ایریا، گراؤنڈ فلور، اوپن ایریا، بلڈنگ کے آخری فلور پر ہیلی پیڈ سسٹم، بلڈنگ کی بیسمنٹ ،بلڈنگ کے سامنے روڈ سے دوری،بلڈنگ بنانے کے لیے قطعہ اراضی کے 2پلاٹوں کو آپس میں ضم کرنا،ہنگامی صورتحال میں باہر نکلنے کا راستہ، اپارٹمنٹ بلڈنگ کی اونچائی، ہر اپارٹمنٹ میں کتنی جگہ کھلی رکھی جائے اور کتنی کورڈ، جیسی ترامیم پیش کی گئی ہیں چیف ٹاؤن پلانر چوہدری محمد اکرم کا کہنا ہے کہ بڑھتی ہوئی آبادی اور شہروں کی طرف تیزی سے عوام کی نقل مکانی کے پیش نظر شہری علاقوں میں ترقی کی اشد ضرورت ہے لاہور کو مستقبل کے چیلنجوں سے نمٹنے کے قابل بنانے اور ترقی کے لیے بہتر اقدام اٹھانا ضروری ہے اس لیے بلڈرز،آرکیٹیکٹس،ایڈمنسٹریٹر اور کنٹرولنگ اتھارٹیز کو درپیش مشکلات کے باعث بلڈنگ ریگولیشنز میں ترامیم ضروی سمجھی گئیں اس لیے ہم نے بلڈنگ ریکولیشنز میں ترامیم کی ہیں اور اپنا ایجنڈا عوام کے سامنے رکھ دیا تھا کیونکہ ان ترامیم کا مقصد ہی عوام کی مشکلات اور آنے والے دنوں کی ترقی و تعمیر کو مد نظر رکھ کر کیا گیا جس کو عوام الناس نے پسند کیا ہے جس کے پیش نظر اتھارٹی نے بھی عوام الناس کی تحریری جواب دیں کی روشنی میں باقاعدہ منظوری دی گئی ہے اور ہمیں امید ہے کہ ان ترامیم سے عوام کی مشکلات میں آسانی پیدا ہو گی اور آنے والے وقت میں لاہور شہر کی ترقی میں معاون ثابت ہوں گی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -