حضرت ابوبکر صدیقؓ کے یوم وصال کی نسبت سے کانفرنس،صدارتعطا مانیکا نے کی

حضرت ابوبکر صدیقؓ کے یوم وصال کی نسبت سے کانفرنس،صدارتعطا مانیکا نے کی

  

لاہور(پ ر)خلیفہ اول حضرت ابوبکر صدیقؓ کے یوم وصال کی نسبت سے کانفرنس محکمہ اوقاف و مذہبی امور پنجاب کے زیرِ اہتمام صوبائی وزیر عطا محمد مانیکا کی صدارت میں ایوان اوقاف کے کمیٹی روم میں منعقد کیاگیا۔کانفرنس کاآغاز احمد میاں تھانوی کی تلاوت قرآن پاک اور مرغوب احمدہمدانی کی نعت رسول مقبول ﷺ سے کیا گیا۔ڈاکٹر مظہر معین نے اپنے کلیدی مقالہ میں حضرت سیدّ نا ابو بکر صدیق رضی اللہ عنہ کا شجرہ نسب ،حیات مبارکہ اور خلافت کے عہد میں اسلام کو عراق اور شام تک پھیلانے میں جو کارہائے نمایاں سرانجام دئیے،ان کا نہایت جامعیت سے تذکرہ کیا۔آپ کے عہد میں بے شمار فتنوں نے سراٹھایا ،علاوہ ازیں آپ کے عہد میں قرآن مجید کا پہلا تحریری نسخہ تیار کیاگیا اور تلفظ کی درستگی کے لیے اعراب لگانے کا فیصلہ کیاگیا۔آپ کے حسنِ اخلاق اور سخاوت کے بہت دوررس نتائج مرتب ہوئے ۔آپ نے زمانہ جاہلیت میں بھی شراب نوشی نہیں کی اور بتوں کی عبادت سے کراہت محسوس کرتے تھے۔ آپ بچپن سے ہی حضرت محمد ﷺ کے قریبی ساتھیوں میں سے تھے ،عشق مصطفی ﷺ کے معانی آپ کے اعمال وافعال سے کھلتے ہے ،آپ کو محافظ رسول ﷺ بھی کہا جاتا ہے ۔آپ نے بہت سے غزوات میں حضرت محمد ﷺ کی حفاظت کی ،پہلے حج کے موقع پر آپ کو ہی امیر حج بنا کر بھیجا گیا ۔آپ حضرت محمد ﷺ کے پہلو میں دفن ہوئے۔سیمینار سے خطاب کرنے والے دیگر مقررین میں علامہ غلام محمد سیالوی ،مولانا فضل الرحیم ،مولانا عبدالستار حامد،مولانا نصرت شاہانی ،مفتی انتخاب احمد نوری اور ڈاکٹر ظہیر احمد شامل تھے۔اپنے صدارتی خطبہ میں صوبائی وزیر اوقاف ومذہبی امور عطامحمد مانیکا نے کہا کہ خلفا ء راشدین کے حوالے سے تقریبات کا اہتمام بہت اچھی روایت ہے اس طرح کم ازکم ہمیں سال میں ایک مرتبہ خلفاء راشدین کے حوالے سے گفتگو کرنے اور بات سننے کا موقع ملتا ہے ۔چودہ سو برس ہوگئے ہیں مگر وقت کے ساتھ ساتھ عملی طورپر ہم سیرت رسول حضرت محمد ﷺ اور خلفاء راشدین کی حیات و تعلیمات سے دور ہوتے جارہے ہیں ۔علماء کرام پیغمبروں کا ورثہ ہیں ،ہمیں انہی سے رہنمائی حاصل کرنا چاہیے۔ہم جب اﷲ اور اس کے رسول ﷺ اور صحابہ کرامؓ کے راستے کو چھوڑدیں گے تو ہماری دعائیں مستجاب نہیں ہونگی اس کی بنیادی وجہ ہمارا مذہبی اور معاشرتی طرز عمل ہے،اگر عمل و رہنمائی حاصل نہ کی جائے تو ان رسمی اجتماعات کا وگرنہ کوئی اور فائدہ نہیں ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -