ہائیکورٹ، سوتیلی ماں کے قاتل کی اپیل مسترد ، سزائے موت کنفرم

ہائیکورٹ، سوتیلی ماں کے قاتل کی اپیل مسترد ، سزائے موت کنفرم

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے سوتیلی ماں کے قتل کے مجرم کی اپیل مسترد کرتے ہوئے اسکی سزائے موت کنفرم کردی ۔نوجوان راشدنے باپ کی طرف سے حقیقی ماں کو طلاق دے کر شاہین بی بی سے شادی کرنے کے رنج میں اسے قتل کیا تھا۔جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی کی سربراہی میں دورکنی بنچ نے سزائے موت کے مجرم راشد کی اپیل کی سماعت کی، مجرم کے وکلاءنے دلائل دیتے ہوئے بنچ کو بتایا کہ راشد کیخلاف موثرشہادت اور ثبوت موجود نہیں ہیں اور ٹرائل کورٹ نے راشد کو حقائق کے برعکس موت کی سزا سنائی ہے، انہوں نے استدعا کی راشد کی سزائے موت کالعدم کیا جائے ، پراسکیوٹر مرزا عابد مجید نے بنچ کو بتایا کہ ٹرائل کورٹ نے راشد کو گواہوں کے بیانات ، ٹھوس شواہد اور مﺅثر شہادتوں کی بناءپر موت کی سزا سنائی تھی جبکہ قاتل نے خود اعتراف جرم کیا تھا، ہائیکورٹ کے بنچ نے دلائل سننے کے بعد راشد کی اپیل خارج کردی۔جبکہ سزائے موت کی کنفرمیشن کے لئے بھیجا گیا ریفرنس منظور کرلیا ۔

سزائے موت

مزید :

صفحہ آخر -