گلگت بلتستان میں گندم پر سبسڈی بحا ل کی جائے،تنویر اشرف کائرہ

گلگت بلتستان میں گندم پر سبسڈی بحا ل کی جائے،تنویر اشرف کائرہ

  

لاہور(سپیشل رپورٹر) پیپلز پارٹی پنجاب کے جنرل سیکرٹری تنویر اشرف کائرہ نے وفاقی وزیر برائے امور کشمیر اور شمالی علاقہ جات برجیس طاہر کی سربراہی میں بننے والی کمیٹی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ کمیٹی جلد از جلد وفاقی حکومت کو گندم کی سبسڈی بحال کرنے کی سفارشات کرے کیونکہ اس پر گلگت بلتستان کے لاکھوں لوگوں کی زندگیوں کا سوال ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ سمجھ سے بالاتر ہے کہ لوگوں کو کیوں اتنی تکلیف سے گزرنا پڑا اور متعلقہ وزیر اس معاملے کو وہاں کی عوام اور حکومت کا مسئلہ پیش کر کے وفاقی حکومت کا دفاع کرنے کی ناکام کوشش کرتے رہے ۔انہیں معلوم تھا کہ گندم کی سبسڈی کا معاملہ وفاقی حکومت کا ہے اور وہی اسکو حل کر سکتی ہے۔انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ موجودہ حکومت سرکاری ملازمین ہوں یا عام لوگ، انکے جائز مطالبات تسلیم کرنے کی بجائے انکو انتہائی قدم اٹھانے پر مجبور کر دیتی ہے جیسا کہ گلگت بلتستان کے لوگ پچھلے 9دنوں سے سرکاری دفاتر کے سامنے دھرنا دئیے ہوئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ینگ نرسز ، ینگ ڈاکٹرز یا لیڈی ہیلتھ ورکرز ہوں، انہوں نے بھی اپنے مطالبات منوانے کے لیے انتہائی اقدامات اٹھائے اور پھر پنجاب حکومت نے انکے مطالبات مانے ۔اس دوران مظاہرین کو بد ترین تشدد کا نشانہ بھی بنایا گیا جو کہ منتخب حکومت کو زیب نہیں دیتا۔ انہوں نے کہا کہ موجود ہ حکومت غریبوں اور امیروں کے ساتھ امتیازی پالیسیوں پر عمل پیرا ہے جیسا کہ حال ہی میں حکومت نے سرمایہ داروں کو 300ارب روپے سے زیادہ کی ٹیکس کی مد میں مراعات دیں ہیں ۔گندم کی سبسڈی اس رقم کا معمولی تناسب ہے لیکن اس کو ختم کرنے سے لاکھوں لوگ شدید عدم تحفظ کا شکار ہوئے۔ انہوں نے پھر زور دے کر کہا کہ کمیٹی اپنا جلد از جلد اجلاس بلائے اور گندم کی سبسڈی کے مسئلے کو گلگت بلتستان کے لوگوں کے مطالبات کی روشنی میں جلد از جلد حل کرے۔

مزید :

علاقائی -