کانگریس ایسا کمپیوٹر وائرس ہے جس نے پورے بھارتی سسٹم کو تباہ کر دیا نریندر مودی

کانگریس ایسا کمپیوٹر وائرس ہے جس نے پورے بھارتی سسٹم کو تباہ کر دیا نریندر ...

  

نئی دہلی(آئی این پی ) بھارتی پارلیمانی انتخابات کے چھٹے مرحلے کا آغاز (آ ج) جمعرات سے ہوگا،بی جے پی اور کانگریس کے درمیان الزامات کا تبادلہ بھی جاری ہے،بھارتیہ جنتا پارٹی کے وزارت اعظمی کے امیدوار نریندر موودی نے کانگریس کو کمپیوٹر وائرس سے تشبیہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس نے پورے بھارتی سسٹم کو تباہ کردیا ہے، کوئی انہیں ووٹ دے یا نہ دے مگر وہ اقتدار میں آئے تو ان کی حکومت ہر بھارتی شہری کا خیال رکھے گی۔بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق اترپردیش میں بارہ نشستوں پر (آج) جمعرات کوووٹ ڈالے جائیں گے 187 امیدوار انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں۔دوسری طرف بھارتی جنتا پارٹی اور کانگریس کے رہنماء ایک دوسرے کے خلاف زہر اگل رہے ہیں۔ ریاست آندھرا پردیش کے شہر ناظم آباد میں بھارتی جنتا پارٹی نے جلسہ کیا،جب نریندر مودی جلسہ گاہ پہنچے تو ان کے حامیوں نے انہیں ابھی سے ہی وزیراعظم کا لقب دے دیا۔ نریندر مودی نے خطاب میں سونیا گاندھی اور راہول کو خوب تنقید کا نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا کہ ماں بیٹے نے بھارت کو کہیں کا نہیں چھوڑا،،تلنگا کی عوام سے کہتا ہوں کہ کیا وہ ماں بیٹے کو کامیاب کرانے کی غلطی دہرائیں گے۔اپنے خطاب میں انہوں نے کانگریس کو کمپیوٹر وائرس سے تشبیہ دیتے ہوئے کہا کہ اس نے پورے بھارتی سسٹم کو تباہ کردیا ہے۔ مودی نے کہا ہے کہ کوئی انہیں ووٹ دے یا نہ دے مگر وہ اقتدار میں آئے تو ان کی حکومت ہر بھارتی شہری کا خیال رکھے گی۔ انھوں نے کہا کہ اگر وہ وزیر اعظم بنے تو ان کی کوشش ہو گی کہ ملکی معیشت کو پٹری پر چڑھایاا جائے اور تمام شہریوں کی فلاح و بہبود کے لیے کام ہو، چاہے ان کا مذہب کچھ بھی ہو۔ نریندر مودی کے جواب میں سونیا گاندھی بھی خوب گرجیں برسیں۔ انہوں نے مغربی بنگال میں خطاب کے دوران کہا کہ بھارتی جنتا پارٹی جھوٹے الزامات لگا کر قوم کو گمراہ کررہی ہے اور کرسی پانے کے لئے اوچھے ہتھکنڈے پر اتر آئی ہے۔دوسری جانب چھتیس گڑھ میں ایک انتخابی ریلی سے خطاب میں کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے کہا کہ مودی کی تمام تقریروں میں سارا زور ان کی اپنی ذات پر ہوتا ہے، وہ مل کر کام کرنے پر یقین نہیں رکھتے۔ جہاں دوبڑی پارٹیاں ایک دوسرے کو آڑے ہاتھوں لے رہی ہیں وہیں ایک آزاد امیداور اسپائیڈر مین بن کر انوکھے انداز میں مہم چلارہا ہے اور گھروں پر چڑھ کر ووٹ مانگ رہا ہے

مزید :

علاقائی -