13سالہ ہوٹل ملازم نے گلے میں پھندا ڈال کر خود کشی کرلی

13سالہ ہوٹل ملازم نے گلے میں پھندا ڈال کر خود کشی کرلی
 13سالہ ہوٹل ملازم نے گلے میں پھندا ڈال کر خود کشی کرلی
کیپشن: pic

  


لاہور(ملک خیام رفیق)ستوکتلہ کے علاقہ میں والدین کی ڈانٹ ڈپٹ سے دلبرداشتہ ہوکر13سالہ ہوٹل ملازم نے گلے میں پھندا ڈال کر خود کشی کرلی ۔ متو فی کے لو احقین کے مطا بق ہو ٹل انتظا میہ نے قتل کیا ہے پولیس نے نعش ضروری کا روائی کے بعد ورثا ء کے حوالے کر دی تاہم کسی کے خلا ف مقد مہ درجہ نہیں کیا گیا ہے ۔ تفضیلا ت کے مطا بق شیخوپورہ کے رہائشی ارشد کا 13سالہ بیٹا اسد ،ستوکتلہ کے علاقہ شاہ دیوال سٹاپ کے قریب واقع ملک وحید کے ہوٹل پر 5ہزار روپے ماہوار پر ملازمت کرتا تھا ۔ 20روز قبل چھٹی لے کر والدین کوگھر ملنے گیا تو اس نے واپس کام پر جانے سے انکار کردیا اور اپنے والد کو بتا یا کے مجھے خوف آتا ہے اس لئے میں کا م پر نہیں جا نا چاہتا لیکن اس کا با پ اسکو سمجھا کرکام پر چھوڑ کر چلا گیا ۔ مالک ہوٹل بند کرکے شادی پر چلا گیا جبکہ اسد کمرے میں جاکر سوگیا ۔ واپس آکر دیکھا تو اس کی نعش پنکھے سے لٹک رہی تھی۔اطلاع ملنے پر پولیس موقع پر پہنچ گئی اور نعش کو قبضہ میں لیکر ورثاء کو اطلاع کردی ۔متو فی کے والد نے روز نا مہ پا کستان سے گفتگو کر تے ہو ئے کہا کہ میرے بیٹے کو قتل کیا گیا ہے ۔مجھے اندیشہ ہے کہ میرے بیٹے کو بد اخلا قی کے بعد قتل کیا گیا ہے لیکن پو لیس اور ہو ٹل کا مالک میرے بیٹے کے قتل کو خود کشی کا رنگ دینے کی کو شش کر رہے ہیں ۔میر ی آئی پنجا ب اور سی سی پی او لا ہور سے اپیل ہے کہ انکو ائری کر کے انصا ف فرا ہم کیا جا ئے ۔

مزید :

علاقائی -