کرچی کے مختلف علاقوں میں پُر تشدد واقعات اور فائرنگ سے 5افراد جاں بحق

کرچی کے مختلف علاقوں میں پُر تشدد واقعات اور فائرنگ سے 5افراد جاں بحق

  

کراچی(آئی این پی) کراچی کے مختلف علاقوں سے ایک گھنٹے کے دوران تین تشدد زدہ لاشیں برآمد ہوئیں ، بلدیہ ٹاؤن میں مبینہ پولیس مقابلے میں اغوا برائے تاوان کا ملزم مارا گیا ، ابراہیم حیدری اور لیاقت آباد میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے دو افراد جاں بحق ہو گئے جبکہ سی ویو کے قریب ریستوران سے 9 لاکھ روپے لوٹ لئے گئے۔بدھ کو پولیس کے مطابق شہر قائد میں تشدد زدہ لاشیں ملنے کا سلسلہ تھم نہ سکا ، شہر کے مختلف حصوں سے تین تشدد زدہ لاشیں ملی ہیں۔دو لاشیں میوہ شاہ قبرستان سے ملیں جبکہ تیسری تشدد زدہ لاش لسبیلہ پل کے قریب سے برآمد ہوئی۔مقتولین کو گولیاں مار کر ہلاک کیا گیا جن کی فوری شناخت نہیں ہو سکی۔بلدیہ ٹاؤن میں مبینہ پولیس مقابلے میں اغواء برائے تاوان کا ملزم مارا گیا۔ابراہیم حیدری میں ذاتی تنازعے پر فائرنگ کر کے ایک شخص کو قتل کر دیا گیا۔ پولیس نے ملزم کو گرفتار کرکے ایک ریپیٹر برآمدکر لیا جبکہ منگھوپیر میں کار پر فائرنگ سے ایک شخص ہلاک ہوگیا۔ لیاقت آباد میں تین ہٹی پل کے قریب فائرنگ سے ایک شخص جاں بحق ہوا، جبکہ رام سوامی کے علاقے میں فائرنگ سے ایک شخص زخمی ہو گیا۔دوسری جانب عزیز بھٹی کے علاقے میں اے ٹی ایم باکس کے باہر لوٹ مار کرنے والے دو ڈاکوؤں کو شہریوں نے پکڑ کر پولیس کے حوالے کر دیا۔ ملزموں کے قبضے سے 6 موبائل فون اور ایک پستول برآمد ہوا ، پولیس کے مطابق ملزم متعدد اسڑیٹ کرائم کی وارداتوں میں ملوث ہیں۔دوسری جانب سی ویو کے قریب واقع ریستوران سے ملزمان 9 لاکھ روپے لوٹ کر فرار ہو گئے، پولیس نے کہاہے کہ واقعہ میں ریستوران کا سیکیورٹی گارڈ ملوث ہے جس کی گرفتاری کے لئے چھاپے مارے جا رہے ہیں

مزید :

صفحہ اول -