گردشی قرضہ 300 ارب ہو گیا، حکومت اور ترسیلی کمپنیاں بھی مقروض، لوڈشیڈنگ میں اضافہ

گردشی قرضہ 300 ارب ہو گیا، حکومت اور ترسیلی کمپنیاں بھی مقروض، لوڈشیڈنگ میں ...
گردشی قرضہ 300 ارب ہو گیا، حکومت اور ترسیلی کمپنیاں بھی مقروض، لوڈشیڈنگ میں اضافہ
کیپشن: Electricity

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) توانائی کے شعبے میں گردشی قرض 300 ارب روپے تک پہنچ گیا ہے جس کے باعث لوڈشیڈنگ میں بھی اضافہ ہو گیا ہے۔ نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق گزشتہ سال بغیر آڈٹ 480 ارب روپے کا گردشی قرضہ ادا کیا گیا ہے تاہم اب یہ قرضہ دوبارہ 300 ارب روپے تک پہنچ گیا ہے جبکہ واجبات کی ریکوری اور لائن لاسز میں کمی پر کوئی پیش رفت نہیں ہو سکی ہے۔ رپورٹ کے مطابق وفاقی حکومت نے رواں سال بجلی پر سبسڈی کی مد میں 220 ارب روپے مختص کئے جس میں سے 50 ارب روپے ادا کرنے باقی ہیں۔ بجلی کی ترسیل کرنے والی کمپنیاں بھی 90 ارب روپے کی نادہندہ ہیں اور صرف کے الیکٹرک کے ذمے 11 ارب روپے کے واجبات ہیں۔

مزید :

بزنس -Headlines -