سی پیک منصوبے کے دوسرے مرحلے میں پاکستان میں چینی صنعتی انقلاب رونماہو گا : وزارت منصوبہ بندی

سی پیک منصوبے کے دوسرے مرحلے میں پاکستان میں چینی صنعتی انقلاب رونماہو گا : ...

 اسلام آباد (این این آئی) وزارت منصوبہ بندی و ترقی کے حکام نے کہا ہے کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری (سی پیک ) منصوبے کے دوسرے مرحلے پاکستان میں چین کے تعاون سے صعنتی انقلاب برپا ہوگا‘ اس مرحلہ میں ملک کے چاروں صوبوں ‘ گلگت بلتستان ‘ فاٹا اور آزاد کشمیر میں 9 صنعتی زونز بنائیں جائیں گے۔حکام کے مطابق سی پیک کے تحت صوبائی حکومتوں کی جانب سے تجویز کردہ 9 خصوصی زونز پر کام جاری ہے ، دو سے تین سال کے اندر یہ اکنامک زونز مکمل کردیے جائیں گے، سی پیک کے تحت انرجی اور انفراسٹرکچر کے منصوبوں کو عملی بنانے کے بعد صنعتی تعاون کے مرحلے میں داخل ہوئے ہیں ، چھٹی جے سی سی میں ہر صوبے اور ہر علاقے میں ایک ایک زون قائم کرنے کا فیصلہ ہوچکا ہے، صوبائی حکومتوں کی تعاون سے 2 سے تین سال کے اندر یہ اکنامک زونز مکمل کردئیے جائیں گے جس کی بدولت ملک کی معدنی دولت کوبروئے کار لانے کی کوششیں کی جائے گی۔انہوں نے بتایا کہ صوبوں کے وسائل کو مد نظر رکھتے ہوئے گوادر سے لیکر چترال تک معدنی ذخائر کا استعمال یقینی بنایاجائیگا ٗ مائنگ کے شعبے میں نئی ٹیکنالوجی کا استعمال کرکے فاٹا کے مہمندماربل زون کو جدید خطوط پر استوار کیا جائیگا ٗ ان 9زونز کے قیام کے بعد صنعتی تعاون کا دائرہ کار مزید بڑھایا جائے گا۔انہوں نے بتایا کہ خیبر پختونخوا کی جانب سے رشکئی اکنامک زون اور سندھ کی جانب سے چائنہ اکنامک زون داریجی، بلوچستان کی جانب سے بوستان اکنامک زون اورپنجاب کی جانب سے چائنہ اکنامک زون شیخوپورہ، گلگت بلتستان کی جانب سے مقپونداس گلگت جبکہ کشمیر کی جانب سے بھمبر صنعتی زون کو شامل کرنے کی تجویز دی گئی تھی،دارلحکومت اسلام آباد میں آئی سی ٹی ماڈل انڈسٹریل زون اورپورٹ قاسم میں پاکستان سٹیل میل کی اراضی پرانڈسٹریل پارک بنانے جبکہ فاٹا کی جانب سے مومند ماربل انڈسٹریل زون بنانیں جائیں گے۔ سی پیک کے دوسرے مرحلے میں چین کے تعاون سے پاکستان میں صنعتی زونز قائم کئے جائیں گے۔ پاکستان اور چین کے حکام نے دوسرے فیز کیلئے بات چیت کرنی شروع کر دی انہوں نے بتایا کہ چین کے سرمایہ کار سٹیل، سیمنٹ، توانائی، ٹیکسٹائل اور آٹو سیکٹر کے شعبے میں دلچسپی لے رہے ہیں۔

مزید : کامرس