زرعی شعبہ کی ترقی کیلئے کاشتکاروں کا تحفظ ضروری ہے: عاطف اکرام شیخ

زرعی شعبہ کی ترقی کیلئے کاشتکاروں کا تحفظ ضروری ہے: عاطف اکرام شیخ

  



اسلام آباد(کامرس ڈیسک)ایف پی سی سی آئی کی ریجنل کمیٹی برائے صنعت کے چیئرمین عاطف اکرام شیخ نے کہا ہے کہ زرعی شعبہ کی کارکردگی بہتر بنانے کیلئے کاشتکاروں کو تحفظ فراہم کرنا ضروری ہے۔ دیہی آبادی کوقدرتی آفات ، وباؤں اور موسمی اثرات سے بچانے کیلئے زرعی انشورنس کے نظام کو مستحکم کرنے کی ضرورت ہے۔زرعی انشورنس ملک کے زرعی شعبہ کو مستحکم کرنے میں بنیادی کردار ادا کر سکتی ہے، اس سے زرعی پیداوار مین تیس فیصد تک اضافہ ہو سکتا ہے جبکہ پاکستان میں غذائی عدم تحفظ کا خاتمہ ہو سکتا ہے۔عاطف اکرام شیخ نے یہاں جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا کہ کسانوں کی جان مال اور اثاثوں کی حفاظت حکومت اور نجی شعبہ کی زمہ داری ہے۔ کاشتکاروں کو وائرس، سیلاب، خشک سالی، بارشوں، قدرتی آفات، خراب موسم اور دیگر مسائل سے بچاکر زراعت اور لائیو سٹاک کے شعبہ میں انقلاب لایا جا سکتا ہے۔انھوں نے کہا کہ کسانوں صرف اس صورت میں نئے طریقے استعمال کریں گے جب انھیں بیمہ کی سہولت حاصل ہو گی۔عاطف اکرام شیخ نے کہا کہ کمرشل انشورنس کمپنیوں کی حوصلہ افرائی اور انکی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کی ضرورت ہے تاکہ وہ زراعت کے شعبہ میں بھرپور انداز میں قدم رکھ کر نئی مصنوعات متعارف کروا سکیں۔انھوں نے کہا کہ انشورنس کے علاوہ کاشتکاروں کو ٹیکنالوجی کے استعمال کی بھی ضرورت ہے تاکہ وہ پیداوار میں اضافہ کر کے خوشحال ہو سکیں۔ انھوں نے کہا کہ بیمہ سے خطرہ کا تدارک نہیں ہوتا مگر نقصانات تقسیم ہو جاتے ہیں جس سے کاشتکاروں پر مالی بوجھ کم ہو جائے گا۔

مزید : کامرس