سو فیصدانرولمنٹ کا ہدفاساتذہ کو اعتماد میں لئے بغیر حاصل نہیں ہو سکتا،پنجاب ٹیچرز یونین

سو فیصدانرولمنٹ کا ہدفاساتذہ کو اعتماد میں لئے بغیر حاصل نہیں ہو سکتا،پنجاب ...

  



لاہور(خبرنگار) پنجاب ٹیچرز یونین کے چیئرمین سید سجاد اکبر کاظمی، مرکزی صدر چوہدری محمد سرفراز، رانا لیاقت علی، جام صادق، رانا انوار،راناالطاف حسین، ساجد محمود چشتی، عبدالقیوم راہی و دیگر نے کہا ہے کہ ہم 100%انرولمنٹ مہم کے خلاف نہیں لیکن یہ ہدف اساتذہ کو اعتماد میں لئے بغیر حاصل نہیں ہو سکتا۔ اس کے لئے اساتذہ کی مشاورت سے اقدامات اٹھانا ہونگے۔اس وقت محکمہ تعلیم کے افسران وزیر اعلی پنجاب کو سب اچھا کی رپورٹ دینے کیلئے اساتذہ سے جبری داخلہ کروا رہے ہیں اور دفاتر میں بیٹھے خود ساختہ اعداد وشمار بھیج رہے ہیں۔پرائمری ، مڈل و ہائی سکولوں کو انرولمنٹ ٹارگٹ پالیسی کے بر عکس دئیے جا رہے ہیں اور مجبور کیا جا رہا ہے کہ یہ ٹارگٹ پورے کئے جائیںیہی وجہ ہے کہ جب ایم ای اے سکول وزٹ دوران طلباء کی تعداد گنتے ہیں تو اس میں واضح فرق آتا ہے جس پر اساتذہ وہیڈ ٹیچرزکے خلاف پیڈا ایکٹ کے تحت کاروائی کی جاتی ہے ۔

اور جو اساتذہ و ہیڈ ٹیچرز انرولمنٹ ٹارگٹ کے بارے میں حقائق بتا رہے ہیں تو انہیں ڈرایا دھمکایا جاتا ہے اور طوفان بدتمیزی برپا کرکے خاموش کروا دیا جاتا ہے۔لہذا وزیر اعلی پنجاب ، صوبائی وزیر تعلیم پنجاب ، چیف سیکرٹری پنجاب اور سیکر ٹری سکولز پنجاب سے مطالبہ ہے کہ پالیسی کے مطابق ہر ہیڈٹیچر سے حالات و وسائل کے مطابق انرولمنٹ پلان طلب کرکے داخلہ مہم کو کامیاب بنایا جائے۔خوف وہراس کی فضاء کا خاتمہ کیا جائے اور 18اپریل کو پنجاب ٹیچرز یونین کے ساتھ طے کئے جانے والے امور پر 15مئی تک عمل درآمد یقینی بنایا جائے ورنہ پنجاب ٹیچرز یونین 26/25 مئی کو لاہور میں احتجاج کرنے میں حق بجانب ہوگی۔

مزید : میٹروپولیٹن 4