ترکی میں سائنسدانوں کو 13 ہزار سال پرانی عمارت مل گئی

ترکی میں سائنسدانوں کو 13 ہزار سال پرانی عمارت مل گئی
ترکی میں سائنسدانوں کو 13 ہزار سال پرانی عمارت مل گئی

  



انقرہ(مانیٹرنگ ڈیسک) دہائیاں قبل ترکی کے علاقے گوبیکلی میں ہزاروں سال قدیم تہذیب کے آثار دریافت کیے گئے تھے۔ یہاں پتھروں سے بنے کئی ستون بھی ہیں جن پر انسانوں، جانوروں، پرندوں اور حشرات کی تصویریں کندہ ہیں۔ ان تصویروں پر طویل تحقیق کے بعد ماہرین نے انتہائی حیران کن انکشاف کر دیا ہے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق سکاٹ لینڈ کی یونیورسٹی آف ایڈنبرا کے سائنسدانوں نے تحقیقاتی نتائج میں بتایا ہے کہ ’’ان اشکال سے معلوم ہوا ہے کہ 10ہزار 950قبل مسیح میں ہمارے نظام شمسی سے ایک سیارہ ٹوٹ کر زمین پر آ گرا تھا اور تباہی پھیلا دی تھی۔ اس حادثے میں ہزاروں لوگ لقمہ191 اجل بن گئے اور کئی جانوروں کی نسلیں مٹ گئیں لیکن اس حادثے نے دنیا کے ماحول میں ایسی تبدیلی پیدا کی جس سے 1ہزار سالہ برف کے دور کا آغاز ہوا۔ اس حادثے کے وقت لوگ خود رو جنگلی پھلوں اور اجناس پر گزراوقات کرتے تھے لیکن برفانی دور کے آغاز پر بچ رہنے والے انسانوں کو منتخب فصلیں ازخود اگانی پڑیں۔ یہیں سے آج کی جدید زراعت کا آغاز ہوتا ہے۔‘‘

مزید : میٹروپولیٹن 4