پیپلز پارٹی نواز شریف کے استعفے کے مطالبے سے دستبردار نہیں ہو گی،اعتزاز احسن

پیپلز پارٹی نواز شریف کے استعفے کے مطالبے سے دستبردار نہیں ہو گی،اعتزاز احسن

  



لاہور( این این آئی) پاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما سینیٹر اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ پیپلزپارٹی کسی صورت بھی وزیر اعظم نواز شریف کے استعفے سے دستبردار نہیں ہو گی ،اگر جے آئی ٹی بنانی ہی تھی تو جوڈیشل کمیشن بنانا چاہیے تھا ، وزیر اعظم نواز شریف نہیں بلکہ جے آئی ٹی نواز شریف کے سامنے پیش ہو گی ،اگر پانامہ کیس میں پیپلز پارٹی کا وزیر اعظم ہوتا تو اسے دو ماہ قبل سزا ہو چکی ہوتی ،میں توقع کر رہا تھاکہ میرے پاس آنے والی پی ٹی آئی کی سینئر قیادت مجھے پانامہ کیس لڑنے کیلئے قائل کرے گی لیکن انہوں نے کہا کہ نہ یہ آپ کیلئے مناسب ہے کہ آپ ہمار اکیس لڑیں اور نہ یہ ہمارے لئے مناسب ہے کہ ہم آپ کو وکیل کریں ۔ ایک انٹر ویو میں انہوں نے کہا کہ پانچوں فاضل ججز کی ججمنٹ میں یہ لکھا ہوا ہے کہ وزیر اعظم کی طرف سے ثبوت کے طور پر جو دستاویزات جمع کرائی گئی ہیں وہ لغو ہیں۔حکمران خاندان کی طرف سے جو مواد پیش کیا گیا ہے اس پر ہی فیصلہ ہو جانا چاہیے تھا ۔ عدالت نے جو حکم دیا ہے وہ تحقیقاتی کمیشن نہیں ہوگا بلکہ تفتیشی ٹیم ہو گی ، یہ کیسے ہو سکتا ہے کہ وزیر داخلہ کے ماتحت ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف آئی اے وزیر اعظم سے پوچھ گچھ کرے گا ،وزیر اعظم نہیں بلکہ جے آئی ٹی وزیر اعظم کے سامنے پیش ہو گی ۔ انہوں نے کہا کہ سب سے اہم بات یہ ہے کہ کیس کی مرکزی کردار مریم نواز شریف کو ان صفحات سے نکال دیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی عدلیہ کی تاریخ ہے کہ یہاں پر مسلم لیگ (ن) کیلئے اور جبکہ پیپلز پارٹی کے لئے انصاف کا پیمانہ اور ہے ، اگر پانامہ کیس میں پیپلز پارٹی کا وزیر اعظم ہوتا تو اسے دو ماہ پہلے ہی سزا ہو چکی ہوتی ۔ فاضل بنچ کی ججمنٹ پڑھ لی جائے تمام ججز نتیجے پر پہنچ چکے ہیں ۔

مزید : علاقائی