میثاق جمہوریت سے پیپلز پارٹی نے نواز شریف کو تیسری مرتبہ وزیر اعظم بنایا

میثاق جمہوریت سے پیپلز پارٹی نے نواز شریف کو تیسری مرتبہ وزیر اعظم بنایا

جمعیت علماء پاکستان (پ ر) خیبر پختونخوا کے صوبائی جنرل سیکرٹری یاسر فرید اعوان نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے پانامہ فیصلے کے بعد ملک کی موجودہ صورت حال میں موجودہ وزیر اعظم اپنے منصب کا اخلاقی اور قانونی حق کھو بیٹھے ہیں ، لہٰذا انہیں با عزت طور پر مستعفی ہو جانا چائیے۔ انہوں نے کہا کہ میثاقِ جمہوریت کے تحت پیپلز پارٹی نے نواز شریف کو تیسری مرتبہ وزیر اعظم بنایا ہے اور نام نہاد جمہوریت کا ڈرامہ رچا کر اپنی اپنی باریاں رکھی ہوئی ہیں انہوں نے کہا کہ پانامہ کے فیصلے سے پہلے پیپلز پارٹی کے قائدِ حزبِ اختلاف نے ہمیشہ عمران خان پر تنقید کی اور نواز شریف کے ساتھ مفاہمت کا کاروبار چلاتے رہے، اب جبکہ پانامہ کا فیصلہ آ گیا ہے تو اب پیپلز پارٹی کا نواز شریف کے خلاف عدم اعتماداسی میثاق جمہوریت کے تحت اپنی باری لینا نظر آرہا ہے اس لئے عوام ان سیاسی بہروپوں سے ہوشیار ر ہے۔ انہوں نے کہا کہ جمہوریت کی بقا کے لئے عمران خان، شیخ رشید اور سراج الحق مبارکباد کے مستحق ہیں جنہوں نے بڑے صبر و تحمل کے ساتھ پانامہ کے فیصلے کا انتظار کیا اور بالآخر وزیر اعظم کو عدالتی فیصلہ کے تحت بد دیانت اور بد عنوان قرار دیا ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم پر اب عدالتی فیصلہ کے مطابق یہ مہر ثبت ہو چکی ہے کہ وہ صادق و امین نہیں رہے لہٰذا انہیں یہ عہدہ چھوڑ دینا چائیے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر