اقتصادی راہداری منصوبے پر کام کرنے والے چینی انجینئر نے اسلام قبول کر لیا

اقتصادی راہداری منصوبے پر کام کرنے والے چینی انجینئر نے اسلام قبول کر لیا
اقتصادی راہداری منصوبے پر کام کرنے والے چینی انجینئر نے اسلام قبول کر لیا

  


مانسہرہ (ڈیلی پاکستان آن لائن )پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے پر کام کرنے والے چینی انجینئر نے اسلام قبول کر لیا ۔

”ڈیلی ٹائمز “ کے مطابق بفا کے علاقے میں سول ہسپتال منصوبے پر کام کرنے والے”الولیا “نامی چینی انجینئر نے اسلام سے متاثر ہو کر مقامی مسجد جا کر کلمہ طیبہ پڑھا اور دائرہ اسلام میں داخل ہو گیا جس کے بعد مسجد کے امام مولانا لال حسین شاہ نے چینی شہری کا نام عبداللہ تجویز کردیا ۔

اسلام قبول کرنے والے چینی انجینئر نے اپنے بیان میں کہا کہ ”میں مسلمانوں کے بھائی چارے اور کسی میت کو تدفین سے قبل جس طرح عزت اور توقیردی جاتی ہے اس سے بے حد متاثر ہوا ہوں “۔

اس نے مزید کہا کہ وہ سول ہسپتال کی جناز گاہ میں لوگوں کو نمازجنازہ کیلئے آتے ہوئے دیکھتا تھا اور ڈاکٹروں سے اس مذہبی رسم کے بارے پوچھتا تھا ۔

اسلام قبول کرنے والا چینی انجینئر پاکستان میں تین سال قبل پوسٹنگ سے ہی اسلام کی تعلیمات حاصل کر رہا تھا اور اب وہ عملی طور پر ایک مسلمان بن چکا ہے ۔

مزید : مانسہرہ