ملک میں جمہوریت نہیں بد ترین ڈکٹیٹر شپ ہے : نواز شریف

ملک میں جمہوریت نہیں بد ترین ڈکٹیٹر شپ ہے : نواز شریف

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) سابق وزیراعظم نواز شریف کا کہنا ہے سینیٹ انتخابات سے متعلق جماعت اسلا می کے امیر سراج الحق کی بات معنی خیز ہے۔گزشتہ روزاحتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر صحافیوں سے گفتگو میں انکا مزید کہنا تھا سراج الحق کہتے ہیں اوپر سے حکم آیا تھا، اس پر سینیٹ میں ووٹ دیئے گئے، جو معنی خیز ہے۔پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمر ان خان اپنے ارکان اسمبلی کی سرزنش کر رہے ہیں، وہ خود اپنی سرزنش بھی کریں کس کے کہنے پر سینیٹ میں ووٹ دیئے۔سابق وزیراعظم نے سوال کیا،کیا عمران خان قوم کو بتائیں گے انہوں نے تیر کو ووٹ نہیں دیا؟'ساتھ ہی ان کا کہنا تھا یہ لوگ تبدیلی لائیں گے؟جو بے اصولی کی سیاست کر رہے ہیں۔کیا عمران خان چوہدری سرور سے متعلق بھی قوم کو جواب دیں گے انہیں ووٹ کیسے ملے؟اس سارے عمل میں صر ف (ن) لیگ اور اتحادیوں نے شفاف طریقے سے ووٹ دیا۔ہم نے ملک میں دہشت گردی کیخلاف کامیاب جنگ لڑی، لیکن ترقی کا یہ صلہ دیا گیا کہ نیب کیسز بنا دیئے گئے۔موجودہ پارلیمنٹ میں کوئی دم خم نہیں، انشاء اللہ اگلی پارلیمنٹ میں فیصلے ہونگے اور سب کچھ ٹھیک کر د ینگے ۔ کلثوم نواز کی طبیعت پہلے سے بہترہے، قوم سے دعاؤں کی اپیل ہے۔نواز شریف کا یہ بھی کہنا تھا چیف جسٹس اپنی بات سنا دیتے ہیں کوئی اور بولتے تو پابندی لگا دیتے ہیں، بی بی سی کے مطابقسابق وزیر اعظم میاں نواز شریف نے الزام عائد کیا ہے کہ ملک میں جمہوریت نہیں بلکہ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی 'بدترین ڈکٹیٹر شپ' ہے۔پیر کے روز احتساب عدالت کے اندر میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے اْنھوں نے کہا کہ ملک میں جو ہو رہا ہے وہ 'جوڈیشل مارشل لا سے کم نہیں ہے۔سابق وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ملک کے 22 کروڑ عوام کی زباں بندی کسی طور پر بھی قابل قبول نہیں ہے۔اْنواز شریف نے صحافیوں کے ساتھ چیف جسٹس کے بارے میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ ہسپتال کا روزانہ دورہ کرتے ہیں اور سبزیوں کے بھاؤ کے بارے میں از خود نوٹس لیتے ہیں تو اس شخص کے گھر بھی جائیں جس کے مقدمے کا فیصلہ گذشتہ 30 برسوں سے نہیں ہوا۔، ریاست پا کستا ن کو کیوں خراب کیا جارہا ہے، عمران خان کہتا ہے نااہلی کا فیصلہ درست نہیں ،اگر خود بات کرتے ہیں تو دوسرں کو سننے کی بھی ہمت کریں، منظور پشتین کے جلسے میں پانی چھوڑ دینا بہت بڑی زیادتی ہے،یہ کہاں کا آزادی اظہار را ئے ہے۔ ہم نے ملک کی خدمت کی ایٹمی قوت بنایا اور سی پیک دیا، کراچی سے دہشتگردی ختم کردی ہے۔ میں نے شہباز شریف سے کہا خیبرپختونخوا اور کر ا چی کے د و ر ے کریں۔ آئے روز ایسے فیصلے دیئے جاتے ہیں جن کی کوئی منطق نہیں کیس میں مجھے سزا دلوانے کی پوری کوشش کی جارہی ہے ۔

نواز شریف

مزید :

صفحہ اول -